Monday , June 25 2018
Home / ہندوستان / ’’بیف کھاؤ مگر جشن منانے کی کیا ضرورت ہے؟‘‘

’’بیف کھاؤ مگر جشن منانے کی کیا ضرورت ہے؟‘‘

غذائی پسند انفرادی معاملہ ، کسی پر زور نہیں ڈالا جاسکتا : وینکیانائیڈو
ممبئی ۔19 فبروری ۔(سیاست ڈاٹ کام) نائب صدرجمہوریہ ایم وینکیا نائیڈو نے ملک میں بیف پر امتناع کے مسئلہ پر اظہارخیال کرتے ہوئے آج کہا کہ ’’اگر کوئی بیف کھانا چاہتے ہیں تو کھائیں لیکن اس کے لئے فیسٹول منانے کی کیا ضرورت ہے ؟‘‘ ۔ نائب صدر ہند نے آر اے پوددار کالج آف کامرس کی پلاٹینم جوبلی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’آپ بیف کھانا چاہتے ہیں تو کھائیں ۔ اس کے لئے فیسٹول کیوں ؟ ۔ اسی طرح ایک ’’کِس ( بوسہ بازی ) فیسٹول‘‘ بھی ہوتی ہے ۔ اگر آپ کِس ( بوسہ لینا ) چاہتے ہیں تو اس کے لئے بھی فیسٹول اور ہرکسی سے اجازت لینے کی کیا ضرورت ہے ؟ ‘‘۔ وینکیا نائیڈو نے پارلیمنٹ پر حملے کے مجرم کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ ’’پھر آپ کے پاس افضل گرو بھی ہے۔ لوگ اس کانام جپتے ہیں ۔ یہ سب کیا ہورہا ہے ؟ اُس نے ہمارا پارلیمنٹ اُڑانے کی کوشش کی تھی ‘‘ ۔ نائیڈو نے ماضی میں بھی بیف کے مسئلہ پر اظہارِخیال کیا تھا ۔ انھوں نے واضح طورپر کہا تھا کہ غذائی پسند ہر کسی کا انفرادی معاملہ ہے ۔ وہ اپنی پسند کے مطابق غذا کااستعمال کرسکتا ہے ۔ انھوں نے کہا تھا کہ وہ کٹرسبزی خور ہیں اور کسی کو یہ نہیں کہنا چاہتے کہ انھیں کیا کھانا ہوگا اور کیا نہیں کھانا ہوگا ۔

TOPPOPULARRECENT