Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / بیف ہندو بھی کھاتے ہیں، لالو پرساد کا متنازعہ ریمارک

بیف ہندو بھی کھاتے ہیں، لالو پرساد کا متنازعہ ریمارک

پٹنہ ، 3 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش میں مبینہ طور پر بیف کھانے پر ایک شخص کو بے رحمانہ مارپیٹ کر ہلاک کردینے پر جاری شدید برہمی کی لہر کے درمیان صدر آرجے ڈی لالو پرساد نے آج ایک تنازعہ چھیڑتے ہوئے کہا کہ ہندو لوگ بھی بیف استعمال کرتے ہیں اور بی جے پی اور آر ایس ایس پر اس مسئلے کو فرقہ وارانہ رنگ دینے کا الزام عائد کیا، جس پر بی جے پی کی طرف سے سخت ردعمل میں کہا گیا کہ وہ اپنا ذہنی توازن کھوبیٹھے ہیں۔ تاہم لالو نے کہا کہ بیف کا لازماً مطلب ’گومن‘ (گائے کا گوشت) نہیں ہوتا ہے اور وہ جو گوشت کھاتے ہیں انھیں ’گومن‘ اور بکری کے گوشت کے درمیان تمیز نہیں ہے۔ لالو جو گوشت خور رہنے کے بعد سبزی خور بن چکے ہیں، انھوں نے زور دیا کہ گوشت کوئی بھی نہ کھائے کیونکہ یہ صحت کیلئے اچھا نہیں۔

TOPPOPULARRECENT