Thursday , July 19 2018
Home / Top Stories / بینک فراڈ مباحث کے انداز پر حکومت۔ اپوزیشن اختلافات

بینک فراڈ مباحث کے انداز پر حکومت۔ اپوزیشن اختلافات

باہم الزام تراشی بے فیض ،راجیہ سبھا کی کارروائی میں مسلسل خلل پر وینکیا نائیڈو کو افسوس
نئی دہلی ۔ 15مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) اپوزیشن اور حکومت کے درمیان اب تک کے سب سے بڑے بینک فراڈ کے مباحث کے انداز پر اختلافات پیدا ہوگئے ۔ نائب صدر جمہوریہ و صدر نشین راجیہ سبھا ایم وینکیا نائیڈو نے کہا کہ فراڈ کے وسیع تر مسئلہ پر پارلیمنٹ میں مباحث ہونی چاہیئے ۔ کس کے دور میں یہ بینک فراڈس ہوئے اس پر مباحث بے فیض ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بینک فراڈ کی وجہ سے ملک کی شبیہہ متاثر ہوئی ہے اور بینکنگ نظام پر عوام کا اعتماد ختم ہوتا جارہا ہے ۔ قبل ازیں لوک سبھا اور راجیہ سبھا دونوں کے اجلاس بار بار ملتوی کئے جاتے رہے ۔ یہ بجٹ اجلاس کا نصف آخر حصہ ہے جس کا آغاز 5مارچ سے ہوا تھا ۔ ایوانوں کی کارروائی مختلف مسائل پر بشمول پنجاب نیشنل بینک اسکام اور آڈٹ پر کارروائی مفلوج ہوگئی ۔ اپوزیشن اس مسئلہ پر ان قواعد کے تحت مباحث چاہتی تھی جس پر قرارداد پر رائے دہی لازم ہوجاتی ہے ۔ جب کہ حکومت مختصر مدتی مباحث بلا رائے دہی پر زور دے رہی تھی ۔ کریڈائی کی سالانہ چوٹی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایم وینکیا نائیڈو نے کہا کہ انہوں نے مباحث سے اتفاق کیا لیکن پی این ڈی اور دیگر مسائل پر ایک ساتھ مباحث بدبختی سے نہیں ہوسکے ۔ انہوں نے کہا کہ ارکان ‘ حکومت اور صدرنشین مباحث چاہتے ہیں لیکن مباحث نہیں ہورہے ہیں ۔ پارلیمنٹ کے دونوں ایوان کی کارروائی آج مسلسل نویں دن مفلوج رہی ۔ حکومت نے شوروغل کے درمیان بعض بلز منظور کروالئے ۔ نیرومودی ‘ میہول چوکسی اور وجئے ملیا سے ملک کی شبیہ متاثر ہونے اور بینکنگ نظام پر عوام کا اعتماد ختم ہوجانے کا بار بار تذکرہ کیا گیا ۔ وینکیا نائیڈو نے کہا کہ عوام جاننا چاہتے ہیں کہ بینکنگ نظام میں کس سطح پر کوتاہی موجود ہے اور اگر ہے تو اس کے خلاف کوئی کارروائی کیوں نہیں ہوئی ۔ انہوں نے کہا کہ کس کے دور اقتدار میں فراڈس کئے گئے ‘ اس پر بحث بے فیض ہے ۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ پارلیمنٹ کی کارروائی چلنے دی جائے گی اور مباحث بامعنی اور تعمیری ہوں گے اس کا پتہ چلایا جائے گا کہ غلطی کہاں ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ باہم الزام تراشی بے فیض ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کی دوسری سب سے بڑی قرض دینے والی پنجاب نیشنل بینک 13ہزار کروڑ روپئے سے محروم ہوگئیں ۔ ارب پتی جوہری نیرو مودی اور ان کے ماما میہول چوکسی مبینہ طور پر جعلسازی پر مبنی مکتوبات طمانیت پر قرض حاصل کر کے ملک سے فرار ہوگئے ۔ نائیڈو کو کریڈائی کو بھی خبردار رہنا کا انتباہ دیا ۔

TOPPOPULARRECENT