Thursday , June 21 2018
Home / Top Stories / بین الاقوامی پروازوں کی معطلی بڑی کامیابی ، حماس

بین الاقوامی پروازوں کی معطلی بڑی کامیابی ، حماس

غزہ سٹی ۔ /23 جولائی (سیاست ڈاٹ کام)حمات نے آج کہا کہ اسرائیل سے بین الاقوامی پروازوں کی آمد و رفت کی معطلی حماس کی بڑی کامیابی ہے ۔ ترجمان سمیع ابو زہری نے ایک بیان میں کہا کہ اسرائیل کی فضائی پٹی کو بند کرنا اور شدید مزاحمت حماس کی عظیم کامیابی ہے اور یہ اسرائیل کی سب سے بڑی ناکامی ثابت ہوئی ہے ۔ فلسطینی علاقہ سے منگل کو داغا گیا راکٹ تل ابیب کے بین گورین ایرپورٹ کے قریب گرا تھا جس کے بعد امریکہ اور یوروپی ایرلائینز نے سکیورٹی وجوہات کی بنا اپنی تمام پروازیں معطل کردی ہیں ۔ آج 16 ویں دن بھی اسرائیل کی بمباری جاری رہی اور بین الاقوامی پروازیں غیر معینہ مدت کیلئے معطل ہوچکی ہیں ۔ /8 جولائی کو شروع ہوئی اس لڑائی میں حماس نے اب تک اسرائیل پر 2120 راکٹس یا مارٹر راؤنڈس فائر کئے ۔ ان میں 1752 اسرائیلی علاقوں میں گرے ۔ اسرائیل کے آئرن ڈوم ڈیفنس سسٹم نے 433 راکٹس کو بے اثر کیا ۔ 2008 ء میں 22 دن کی لڑائی کے بعد اسرائیلی ٹینکس غزہ سٹی کے مضافات تک پہونچ گئے تھے اور اس کے بعد 2012 ء کی 8 روزہ لڑائی میں اس کے 6 سپاہی ہلاک ہوئے تھے لیکن جاریہ لڑائی اسرائیل کیلئے کافی مہنگی ثابت ہورہی ہے ۔

اسرائیل کے جنگی جرائم کی مذمت : سعودی عرب
جنیوا ۔ 23 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب نے غزہ پٹی میں اسرائیل کے شرمناک جنگی جرائم کی مذمت کی ہے اور کہا کہ عالمی برادری کو اسرائیل کے ان دعوؤں پر بیوقوف نہیں بننا چاہئے کہ فلسطین کے راکٹ حملوں کے دفاع کیلئے یہ حملے کئے جارہے ہیں۔ دوسری طرف اقوام متحدہ انسانی حقوق کے ہائی کمشنر نوی پلے نے کہا کہ غزہ پٹی میں اسرائیل کی فوج کارروائی جنگی جرائم کے زمرہ میں آتی ہے۔ اقوام متحدہ میں سعودی سفیر عبداللہ المعلمی نے سلامتی کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل کا یہ کہنا ہیکہ وہ فلسطینیوں کی جانب سے فائر کئے جارہے راکٹوں کے جواب میں اپنا دفاع کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیل کے اس موقف پر عالمی برادری کو بیوقوف نہیں بننا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ وہ دراصل اپنا دفاع نہیں بلکہ جارحانہ حملہ کررہا ہے اور یہ شرمناک جنگی جرائم ہیں۔ نوی پلے نے بھی کہا کہ غزہ میں بین الاقوامی قوانین کی جس انداز میں خلاف ورزی کی جارہی ہے وہ جنگی جرائم کے زمرہ میں آتی ہے۔ انہوں نے حماس کے راکٹ حملوں کی بھی مذمت کی۔

TOPPOPULARRECENT