Tuesday , December 12 2017
Home / کھیل کی خبریں / بیٹسمینوں نے مایوس کیا :کوہلی

بیٹسمینوں نے مایوس کیا :کوہلی

ممبئی۔23اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام )کیریئرکے200 ویں ونڈے میں بہترین سنچری کے باوجود نیوزی لینڈ کیخلاف پہلے ونڈے میں مایوس کن شکست کے بعد کپتان ویراٹ کوہلی نے کہا کہ ٹیم میں بیٹسمینوںکومزید30 سے40 رنز بنانے کی ضرورت تھی۔ہندوستان کو نیوزی لینڈ کیخلاف پہلے ونڈے میں چھ وکٹ سے شکست کا سامنا کرنا پڑا۔کوہلی کے کیریئر کا یہ200 واں ونڈے میچ تھا جس میں انہوں نے 121 رن کی اننگز کھیل کر اپنی 31 ویں سنچری بنائی اور آسٹریلیا کے رکی پونٹنگ کو بھی پیچھے چھوڑ دیا حالانکہ انکے علاوہ دنیش کارتک کی 37رنوں کی اننگز ہی دوسری بڑی اننگز رہی۔کوہلی نے میچ کے بعد کہا کہ میرے لئے اننگز میں سنچری بنانا اطمینان بخش تھا لیکن میچ میں نیوزی لینڈ نے ہماری ٹیم پر دباؤ بنادیا۔ ہمیں لگا کہ 275کا اسکور کم سے کم ہونا چاہئے تھا۔ راس ٹیلر اور ٹام لاتھم نے بہترین اننگز کھیلی۔ انہوں نے ہمیں کوئی موقع ہی نہیں دیا۔ہندوستانی کپتان نے کہا کہ جب آپ 200 رنوں کی ساجھیداری کرتے ہیں تو جیتنے کے حقدار ہوتے ہیں۔ میدان پر نمی کے پیش نظر شاید ہم آخری 13۔14 اوور میں 20 سے30رن پیچھے تھے لیکن میچ کے پہلے ہاف میں وکٹ کافی الگ تھی۔ ہمیں یہاں اور بہتر بیٹنگ کرنے کی ضرورت تھی۔ اگر ٹیم کے بیٹسمینس کچھ اور اوور ٹک کر رن بناتے تو ہم تقریباً40 فاضل رنوں کا اضافہ کرسکتے تھے ۔28 سالہ کوہلی نے کہا کہ نیوزی لینڈ نے ہمارے اسپنروں کو بہت اچھی طرح قابو میں کیا اور تیز فاسٹ بولروں کو بھی بہتر ڈھنگ سے کھیلا۔ ہمیں ٹام اور راس کو جیت کا سہرا دینا چاہئے ۔ ٹام نے گزشتہ کچھ وقت سے بین الاقوامی کرکٹ زیادہ نہیں کھیلی ہے لیکن انہوں نے بھی کمال کی اننگز کھیلی۔ نیوزی لینڈ کیلئے راس نے 95 اور ٹام نے ناٹ آؤٹ 103 رن کی اننگز کھیلی اور ایک اوور پہلے ہی ٹیم کو جیت سے ہمکنار کردیا۔

TOPPOPULARRECENT