Saturday , September 22 2018
Home / جرائم و حادثات / بیٹی کی عصمت ریزی کرنے والے باپ کی حرکت پر پولیس بھی حیرت زدہ

بیٹی کی عصمت ریزی کرنے والے باپ کی حرکت پر پولیس بھی حیرت زدہ

وقار آباد 24 مئی ( این ایس ایس ) ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ پولیس ضلع رنگا ریڈی چندنا دیپتی نے اس ضلع میں کمسن بیٹی کی عصمت ریزی کے بعد اس کا قتل کرنیو الے باپ کی انسانیت سوز حرکت کو انتہائی افسوسناک قرار دیتے ہوئے مذمت کی اور کہا کہ شیطان صفت باپ کی اس وحشیانہ حرکت پر خود محکمہ پولیس بھی حیرت زندہ ہے ۔ چندنا دیپتی نے آج یہاں اخباری نمائندوں سے

وقار آباد 24 مئی ( این ایس ایس ) ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ پولیس ضلع رنگا ریڈی چندنا دیپتی نے اس ضلع میں کمسن بیٹی کی عصمت ریزی کے بعد اس کا قتل کرنیو الے باپ کی انسانیت سوز حرکت کو انتہائی افسوسناک قرار دیتے ہوئے مذمت کی اور کہا کہ شیطان صفت باپ کی اس وحشیانہ حرکت پر خود محکمہ پولیس بھی حیرت زندہ ہے ۔ چندنا دیپتی نے آج یہاں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے اس بات پر گہرے صدمہ کا اظہار کیا اور کہا کہ کوئی بھی توقع نہیں کرسکتا کہ کوئی باپ بھی اپنی کمسن بیٹی کے ساتھ ایسی شیطانی حرکت کرسکتا ہے ۔ اس انسانیت سوز حرکت کی مذمت کیلئے کوئی الفاظ نہیں ہیں ۔ ایڈیشنل ایس پی نے مزید کہا کہ میگا وت کمل نے انتہائی وحشیانہ انداز میں اس جرم کا ارتکاب کیا اور اس حقیقت کو بھول گیا تھا کہ وہ ایک انسان ہے اس قسم کے جرائم کے ارتکاب کے سبب انسانیت پر سے اعتماد اٹھ جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ عورت یہ سمجھنے پر مجبور ہوجائے گی کہ وہ کسی مرد پر صد فیصد بھروسہ نہیں کرسکتی ۔ انہوں نے مشورہ دیا کہ عورتوں اور لڑکیوں کو ہمیشہ چوکس اور محتاط رہنا چاہئے ۔ لڑکیوں کو حفاظت خود اختیاری کے ہنر سیکھنا ہوگا ۔ چندنا دیپتی نے کہا کہ عام طور پر یہ نظریہ بھی پایا جاتا ہے کہ سماج میں ایک بہتر و مثبت تبدیلی کی ضرورت ہے ۔ انسانیت کو شرمسار کردینے والے اس المناک واقعہ کا اندرون 24 گھنٹے سراغ لگانے پر انہوں نے اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ بد نصیب کمسن لڑکی کا باپ میگھاوت کمل دوران تحقیقات پولیس کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہا تھا لیکن ابتداء سے اس کا رویہ مشکوک و مشتبہ تھا اور وہ جھوٹ پر جھوٹ بولا جارہا تھا تاہم اس کو حراست میں لے کر تفتیش کے بعد ہی حقیقی واقعہ منظر عام پر آیا جب اس نے اقبال جرم کرلیا۔ پولیس نے وقار آباد ریلوے اسٹیشن پر نصب سی سی ٹی وی میں محفوظ مناظر کا تجزیہ کرتے ہوئے سراغ لگایا ۔ یہ پتہ چلنے پر محکمہ پولیس کے صدمہ اور حیرت کی انتہائی نہ رہی کہ خود باپ نے اپنی کمسن بیٹی 14 سالہ سمرن کی عصمت ریزی کی اور اس کے بعد قتل جیسے گھناونے جرم کا ارتکاب کیا ہے ۔ اس کا تعلق ضلع رنگا ریڈی کے مومن پیٹ منڈل کے تحت ابراہیم پلی تانڈہ سے ہے ۔ ایڈیشنل ایس پی چندنا دیپتی کی موجودگی میں میگھاوت کمل نے اخباری نمائندوں کے روبرو اعتراف کیا کہ اس نے شراب کے نشہ میں دھت ہوکر اس وحشیانہ جرم کا ارتکاب کیا ہے ۔ اس نے کہا کہ واقعہ منظر عام پر انے کی صورت میں بیوی کی نظروں اور تانڈہ میں بے عزتی کے اندیشوں کے تحت اپنی ہی بیٹی کا بے رحمانہ انداز میں قتل کردیا جبکہ وہ (سمرن ) اپنے بے رحم باپ سے بار بار یہ التجاء کررہی تھی کہ اس کو ہلاک نہ کیا جائے تاہم میگھاوٹ کے رشتہ داروںنے الزام عائد کیا کہ پولیس نے میگھاوت کمل کو زدوکوب کرتے ہوئے یہ بیان دینے پر مجبور کیا ہے ۔ معلوم ہوا ہے کہ کمل کی غمزہ بیوی سنیتا اپنے شوہر کی درندہ صفت حرکت اور بیٹی کی المناک موت کے صدمہ سے سکتہ کا شکار ہوگئی ہے اور بات کرنے کے موقف میں نہیں ہے ۔

TOPPOPULARRECENT