Thursday , December 13 2018

بیگم پیٹ اور خیریت آباد میں ہمہ منزلہ کامپلکس کی تجویز

وقف بورڈ کی ذیلی کمیٹیوں کا اجلاس ، آمدنی میں اضافہ کیلئے صدرنشین محمد سلیم کی مساعی
حیدرآباد ۔ 8 ۔ مارچ (سیاست نیوز) تلنگانہ وقف بورڈ نے شہر کے مرکزی مقام پر واقع دو اوقافی اراضیات کو ڈیولپ کرتے ہوئے ہمہ منزلہ کامپلکس تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ بورڈ کی ذیلی کمیٹی برائے ڈیولپمنٹ نے اس تجویز کو منظوری دی ہے ۔ اس سلسلہ میں باقاعدہ منظوری ہفتہ کے دن بورڈ کے اجلاس میں لی جائے گی ۔ بورڈ کی ذیلی کمیٹیوں کا اجلاس آج منعقد ہوا۔ تولیت کمیٹی ، ڈیولپمنٹ کمیٹی اور اڈمنسٹریشن کمیٹی کے اجلاس صدرنشین محمد سلیم کی صدارت میں منعقد ہوئے ۔ فینانس سب کمیٹی کا اجلاس ملتوی کردیا گیا۔ بتایا جاتا ہے کہ ڈیولپمنٹ کمیٹی نے حکومت کی جانب سے اوقافی جائیدادوں کی ترقی سے متعلق دیئے گئے اجازت نامہ کا جائزہ لیا ۔ کمیٹی کا احساس تھا کہ بورڈ کی آمدنی میں اضافہ کیلئے ضروری ہے کہ جائیدادوں کو ترقی دی جائے۔ ڈیولپمنٹ کمیٹی نے بیگم پیٹ میں واقع سابق ٹاسک فورس آفس اور خیریت آباد میں واقع اوقافی اراضی کو ڈیولپ کرنے کی تجویز کو منظوری دی ہے ۔ یہ دونوں اراضیات وقف بورڈ کی تحویل میں ہیں اور ان کے بارے میں کوئی تنازعہ نہیں ہے۔ کھلی اراضی پر ہمہ منزلہ کامپلکس تعمیر کرتے ہوئے وقف بورڈ کو ماہانہ لاکھوں روپئے آمدنی یقینی بنائی جاسکتی ہے ۔ کمیٹی کے ارکان نے دیگر اداروں کے ڈیولپمنٹ پر مرحلہ وار انداز میں تجویز پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پہلے مرحلہ میں دو اراضیات کی نشاندہی کی گئی اور ان پر کامپلکس کی تعمیر کے طریقہ کار کے بارے میں بورڈ کے اجلاس میں فیصلہ کیا جائے گا۔ خیریت آباد میں 500 مربع گز اراضی موجود ہے جسے پارکنگ کیلئے استعمال کیا جارہا تھا، بورڈ نے اس اراضی کی حد بندی کرتے ہوئے تحویل میں لے لیا ہے۔ ڈیولپمنٹ کمیٹی نے نلگنڈہ میں ریوالونگ فنڈ سے کامپلکس کی تعمیر کو منظوری دی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ اوقافی جائیداد کے متولی کی جانب سے طویل عرصہ سے یہ تجویز زیر التواء تھی۔ تولیت کمیٹی نے 10 اوقافی جائیدادوں کی تولیت سے متعلق فیصلہ کئے۔ اڈمنسٹریشن کمیٹی نے انتظامی امور کو بہتر بنانے تجاویز پیش کی۔ صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے اجلاس کو بتایا کہ جائیدادوںکی ترقی کے ذریعہ وقف بورڈ کی آمدنی میں اضافہ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ڈیولپمنٹ کے علاوہ اوقافی جائیدادوں کے کرایہ جات میں اضافہ کی تجویز ہے۔ اس سلسلہ میں ریاست بھر میں باقاعدہ مہم کا آغاز کیا گیا۔ اجلاس میں بورڈ کے ارکان مولانا اکبر نظام الدین ، ملک معتصم خاں ، مرزا انور بیگ ، معظم خاں ، ایم اے وحید ، نثار حسین حیدر آغا، زیڈ ایچ جاوید اور چیف اگزیکیٹیو آفیسر منان فاروقی نے شرکت کی۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT