Saturday , December 16 2017
Home / سیاسیات / بی ایس پی اکاؤنٹ میں 104 کروڑ روپئے

بی ایس پی اکاؤنٹ میں 104 کروڑ روپئے

مایاوتی کے بھائی کے اکاؤنٹ میں بھی 1.43 کروڑ روپئے
نئی دہلی ۔ 26 ڈسمبر۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ (ای ڈی ) نے بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی ) کے ایک اکاؤنٹ میں 104 کروڑ روپئے اور پارٹی صدر مایاوتی کے بھائی آنند کے اکاؤنٹ میں 1.43 کروڑ روپئے کی رقم جمع کرانے کاپتہ چلایا ہے ۔ ذرائع نے بتایا کہ یونائٹیڈ بینک آف انڈیا کی برانچ میں یہ رقم جمع کرائی گئی ۔ عہدیداروں نے کہاکہ ای ڈی نے بینکوں میں مشتبہ اور بھاری رقم جمع کرائے جانے کے معاملے میں معمول کی جب جانچ کی تو اس رقم کا انکشاف ہوا ۔ نوٹ بندی کے بعد یو بی آئی قرول باغ برانچ میں موجود ان دو اکاؤنٹس میں یہ رقم جمع کرانے کا پتہ چلا ۔ اس مسئلہ پر بی ایس پی سے ردعمل جاننے کیلئے ربط قائم کرنے کی کوشش کامیاب نہ ہوسکی ۔ بی ایس پی کے اکاؤنٹ میں 102 کروڑ روپئے کی رقم 1000 روپئے کی نوٹ اور مابقی 3 کروڑ روپئے قدیم 500 روپئے کی کرنسی میں جمع کرائے گئے ۔ عہدیداروں نے کہاکہ وہ بینکوں میں 15 تا 17 کروڑ روپئے کی رقم ہر ایک دن کے وقفہ سے جمع کرانے کی جانچ کررہے تھے۔ ایجنسی کو پتہ چلا کہ اسی برانچ میں آنند نامی شخص کا بھی اکاؤنٹ ہے جو بی ایس پی سربراہ مایاوتی کا بھائی ہے ۔ اُن کے اکاؤنٹ میں 1.43 کروڑ روپئے کی رقم پائی گئی ۔ ای ڈی نے بینک سے ان دو اکاؤنٹس کے بارے میں تمام تفصیلات طلب کی ہیں اور سمجھا جاتا ہے کہ انکم ٹیکس ڈپارٹمنٹ کو بھی مطلع کیا جائے گا ۔ اس کے علاوہ سی سی ٹی وی فوٹیج اور اکاؤنٹ کھولتے وقت پیش کی جانے والی کے وائی سی دستاویزات بھی طلب کی گئی ہیں۔ ایجنسی امکانی حوالہ معاملتوں اور غیرقانونی لین دین کے حوالے سے تقریباً 50 سے زائد بینک برانچس پر نظر رکھے ہوئے ہے اور مختلف پہلوؤں سے یہاں تحقیقات کی جارہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT