Tuesday , December 11 2018

بی جے پی۔ شیوسینا تعلقات میں دراڑ

نئی دہلی۔9نومبر ( سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی اور شیوسینا کے تعلقات میں دراڑ پیدا ہوگئی ہے ۔ مرکزمیں کابینی توسیع کے دوران شیوسینا کے رکن کو شامل نہیں کیا گیا ۔ ممبئی میں مہاراشٹرا حکومت میں شیوسینا کو کوئی قلمدان نہیں دیا گیا جس پر برہم ہوکر شیوسینا کے سربراہ اودھو ٹھاکرے نے اپنے ایم پی انیل دیسائی کو حلف برداری تقریب میںحصہ لئے بغیر دہ

نئی دہلی۔9نومبر ( سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی اور شیوسینا کے تعلقات میں دراڑ پیدا ہوگئی ہے ۔ مرکزمیں کابینی توسیع کے دوران شیوسینا کے رکن کو شامل نہیں کیا گیا ۔ ممبئی میں مہاراشٹرا حکومت میں شیوسینا کو کوئی قلمدان نہیں دیا گیا جس پر برہم ہوکر شیوسینا کے سربراہ اودھو ٹھاکرے نے اپنے ایم پی انیل دیسائی کو حلف برداری تقریب میںحصہ لئے بغیر دہلی سے واپس ہونے کی ہدایت دی تھی ۔ انیل دیسائی کو مودی کابینہ میں وزیر کا درجہ دیا جانے والا تھا لیکن دونوں پارٹیوں نے تعلقات کے کشیدہ ہونے کے بعد انیل دیسائی دہلی ایئرپورٹ سے ہی ممبئی کیلئے واپس ہوگئے ۔ شیوسینا سربراہ اودھو ٹھاکرے نے وزیراعظم نریندرمودی پر الزام عائد کیا کہ وہ شیوسینا کی توہین کررہے ہیں ۔ ایک کے بعد دیگر توہین آمیز رویہ اختیار کئے ہوئے ہے۔ مرکزی وزیر اننت گیٹے واحد شیوسینا لیڈر ہیں جنہیں مرکزی کابینہ میں نمائندگی دی گئی ہے لیکن اب وہ بھی شیوسینا کی قیادت کی ہدایت کے بعد استعفیٰ دے دیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT