Wednesday , December 19 2018

بی جے پی ، ایس پی سے نفرت، فرقہ پرستی کا فروغ

مرکز اور یو پی حکومت نے چند لوگوں کو فائدہ پہنچانے کے سوا کچھ نہ کیا : مایاوتی

مرکز اور یو پی حکومت نے چند لوگوں کو فائدہ پہنچانے کے سوا کچھ نہ کیا : مایاوتی
لکھنو ، 17 جون (سیاست ڈاٹ کام) صدر بی ایس پی مایاوتی نے آج بی جے پی اور سماج وادی پارٹی کو سماج میں نفرت اور فرقہ پرستی پھیلانے کا مورد الزام ٹھہرایا کیونکہ ان کے بعض قائدین زہر اگل رہے ہیں اور ان کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔ مایاوتی نے یہاں پارٹی کے ایک بیان میں کہا کہ جس طرح بعض بی جے پی اور ایس پی قائدین فرقہ پرستی اور نفرت پھیلا رہے ہیں وہ نہایت قابل مذمت اور بدبختانہ ہے … اس سے یہ بھی ثابت ہوتا ہے کہ یہ دونوں پارٹیاں کس طرح عوام کی قیمت پر اپنے سیاسی مفادات کی تکمیل کررہے ہیں۔ بی ایس پی سربراہ نے کہا کہ اگر ان پارٹیوں کی طرف سے سرپرستی نہ کی جاتی تو متعلقہ حکومتوں نے خاطیوں کے خلاف سخت اقدامات کردیئے ہوتے۔ یہ الزام عائد کرتے ہوئے کہ مرکزی اور ریاستی دونوں حکومتیں اپنی تمام تر توانائی چند لوگوں کو فائدہ پہنچانے اور غلط کاموں میں ملوث ہونے میں صرف کررہی ہیں، مایاوتی نے کہا کہ ان حکومتوں نے غریبوں، مزدوروں، کسانوں، دلتوں، پسماندہ طبقات اور مذہبی اقلیتوں کے کروڑہا لوگوں کیلئے کچھ بھی ٹھوس قدم نہیں اٹھایا ہے۔ 21 جون کے یوگا پروگرام پر مایاوتی نے کہا کہ بی جے پی۔ ایس پی زہرافشانی سے ملک اور ریاست کا ماحول مکدر ہورہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT