Saturday , April 21 2018
Home / Top Stories / بی جے پی اسمبلی کیساتھ ہی لوک سبھا انتخابات بھی کرا سکتی ہے :مایا وتی

بی جے پی اسمبلی کیساتھ ہی لوک سبھا انتخابات بھی کرا سکتی ہے :مایا وتی

 

لکھنو 15 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی)کی صدر مایاوتی نے رواں برس ہونے والے کئی اسمبلیوں کے ساتھ ہی لوک سبھا انتخابات کرانے کا امکان ظاہر کرتے ہوئے مرکز کی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی حکومت اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) پرآئین کے ساتھ سے چھیڑ خانی کر کے اس کو کمزور کرنے کا الزام لگایا۔ محترمہ مایاوتی آج یہاں اپنے 62 ویں سالگرہ پر پریس کانفرنس سے خطاب کر رہی تھیں. انہوں نے کانگریس کو بی جے پی جیسا ہی بتایا۔ انہوں نے دونوں جماعتوں پر بی ایس پی کے خلاف سازش کر کے کمزور کرنے کا الزام لگایا۔ انہوں نے بی ایس پی کے کارکنوں سے اپیل کی کہ ان جماعتوں سے محتاط رہیں۔ انہوں نے کہا کہ راجستھان، مدھیہ پردیش، چھتیس گڑھ سمیت کچھ دیگر ریاستوں میں اسمبلی انتخابات ہونے ہیں. امکان ہے کہ مرکزی حکومت ان انتخابات کے ساتھ ہی لوک سبھا کا بھی انتخاب کرا سکتی ہے . انہوں نے کارکنوں سے کہا ہے کہ وہ انتخابات کے لئے تیاریاں کریں.بی ایس پی صدر نے کہا کہ آزادی کے بعد آئین سازی کرنے والے ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈکر ملک کے پہلے قانون وزیر تھے ،لیکن کانگریس کی وجہ سے انکو خود استعفیٰ دینا پڑا تھا۔انہوں نے کہا کانگریس ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈکر کی تصویر کا تو استعمال اوؤٹ لینے کے لئے کرتی ہے مگر ان کو بھارت رتن نہیں دیا۔انہوں نے الزام ائد کیا کہ گزشتہ برس 18 جولائی کو بی جے پی نے انکو دلتوں پر ہوئے ظلم کے خلاف راجیہ سبھا میں بولنے نہیں دیا، انہوں نے اسی لئے استعفیٰ دے دیا۔انہوں نے الزام لگایا کہ دلت مخالف ہیں۔مایاوتی نے کہا کہ بی ایس پی واحد پارٹی ہے جو غریبوں،اقلیتوں اور معاشرے کے کمزور لوگوں کے مفادات کے لئے کام کر تی ہے ۔انہوں نے کہا کانگریس نے ازادی کے بعد طویل عرصے تک حکومت کی مگر دلتوں کو انکے حق سے محروم کر دیا۔بی ایس پی صدر نے کہا کانگریس نے اقتدار میں رہتے منڈل کمیشن کو لاگو نہیں کیا۔

TOPPOPULARRECENT