Tuesday , December 11 2018

بی جے پی اقتدار کے چار برس کسان اور عوام دشمن

Former Ajmer MP and Congress member, Sachin Pilot address the press in Mumbai and slams the policies adopted by Modi Govt. 26th May 2016, Gandhi Bhavan, Girgaon, Mumbai. Express photo by Nirmal Harindran, Mumbai.

راجستھان میں خواتین اور سماج کے دیگر گوشے بھی حکومت سے بدظن ، سچن پائلٹ کا دعویٰ

اجمیر۔ 12 ڈسمبر۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) راجستھان کے اجمیر میں کانگریس نے وزیراعلی وسندھرا راجے کی قیادت والی بی جے پی حکومت کے چار برس کے کام کاج کو کسان اور عوام مخالف قرار دیا ہے ۔ریاستی کانگریس کمیٹی کے صدر سچن پائلٹ کی ہدایت پر آج اجمیر شہر اور ضلع کانگریس کمیٹی کی طرف سے ضلع کلکٹریٹ پر مشترکہ طورپر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ بی جے پی حکومت کے چار برس کے اقتدار کو ’بدانتظامی‘ قرار دیتے ہوئے بڑی تعداد میں کانگریسیوں نے ڈاک بنگلے سے ریلی کے طورپر کلکٹریٹ پہنچ کر اپنا غصہ ظاہر کرتے ہوئے مظاہرہ کیا اور بی جے پی حکومت کی جم کر مذمت کی۔ صدر سٹی کانگریس وجئے جین اور صدر رورل کانگریس بھوپندر سنگھ نے حکومت کے جشن کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ ریاست کا ہر طبقہ بی جے پی کی بدانتظامی سے پریشان ہے ۔ غریب ، دلت، کسان، خواتین، بیروزگاروں کے ساتھ ساتھ تمام ملازمین اور وظیفہ خوار لوگ بھی بی جے پی کی بدانتظامی کے شکار ہیں۔ مظاہرہ میں تمام سابق ارکان اسمبلی ، سینئر کانگریسی رکن، عہدیدار، کونسلر، بلاک صدر و تنظیموں کے عہدیدار موجود رہے ۔دوسری طرف حکومت کے چار برس مکمل ہونے کے موقع پر بی جے پی شہری اور ضلعی یونٹ کی مشترکہ میٹنگ کچہری روڈپر واقع بی جے پی دفتر میں مکمل ہوئی جس میں یہ طے کیا گیا کہ وزیراعلی وسندھرا راجے کے چار برس کی اچھی حکومت کے تحت عوامی فلاح وبہود کی اسکیموں سے فیض یاب ہونے والوں سے رابطہ کرنے کیلئے ’لابھارتھی سنواد کیندر‘ کا افتتاح کیا گیا۔میٹنگ میں بی جے پی کے سٹی پریسیڈنٹ اور رورل پریسیڈنٹ اروند یادو اور بھگوتی پرساد سرسوت سمیت بڑی تعداد میں سینئر پارٹی لیڈر ، عہدیدار، بلاک صدر، مورچہ عہدیدار وغیرہ موجود رہے ۔ سرکاری سطح پر 17 دسمبر کو اجمیر ضلع ہیڈکوارٹر پر ترقیاتی نمائش، کھادی نمائش ، روزگار اور کوآپریٹیو میلہ کا انعقاد کیا جائے گا۔

سرحدوں کی حفاظت کیلئے 174 کروڑ روپئے جاری
نئی دہلی ۔ 12 ڈسمبر۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) وزارت داخلہ نے چھ ریاستوں کو 174 کروڑ روپئے جاری کئے ہیں جو بین الاقوامی سرحد سے متصل ہیں ۔ ایک عہدیدار نے کہاکہ یہ رقم سرحدی علاقوں میں انفراسٹرکچر کے فروغ اور سرحدوں کی حفاظت کے مقصد سے جاری کی گئی ہے ۔ جن ریاستوں کو اس فنڈس سے استفادہ کرنا ہے اُن میں گجرات ، ہماچل پردیش اور اُترپردیش شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT