Sunday , June 24 2018
Home / شہر کی خبریں / بی جے پی اقلیتوں کی کھلی دشمن ، ٹی آر ایس دھوکہ دینے میں ماہر

بی جے پی اقلیتوں کی کھلی دشمن ، ٹی آر ایس دھوکہ دینے میں ماہر

حج سبسیڈی کی برخاستگی ، طلاق ثلاثہ پر صدر کانگریس اقلیتی ڈپارٹمنٹ محمد خواجہ فخر الدین کا ردعمل
حیدرآباد ۔ 16 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز) : صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ محمد خواجہ فخر الدین نے اقلیتی بجٹ کی عدم اجرائی ، حج سبسیڈی کی برخاستگی اور طلاق ثلاثہ کے مسئلہ پر ٹی آر ایس اور بی جے پی کا چولی دامن کا ساتھ ہونے کا الزام عائد کیا۔ محمد خواجہ فخر الدین نے کہا کہ بی جے پی اقلیتوں کی کھلی دشمن ہے ۔ جب کہ ٹی آر ایس اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کو سنہرے خواب دکھا کر پیٹھ میں خنجر گھونپ رہی ہے ۔ مسلمانوں کے اتحاد کو نقصان پہونچانے اور انہیں فرقوں میں بانٹنے کے لیے بی جے پی نے لوک سبھا میں طلاق ثلاثہ کا بل منظور کیا ۔ لیکن کانگریس پارٹی نے راجیہ سبھا میں بی جے پی کے ناپاک عزائم کو ناکام بنادیا ۔ این ڈی اے کی حلیف ہونے کے باوجود تلگو دیشم نے اس کی مخالفت کی جب کہ این ڈی اے کا حصہ نہ ہونے کے باوجود ٹی آر ایس نے غیر حاضر رہتے ہوئے بلواسطہ طور پر بی جے پی کے موقف کی حمایت کی ہے ۔ ٹی آر ایس کا اصلی چہرہ منظر عام پر آگیا ہے ۔ محمد فخر الدین نے کہا کہ پارلیمنٹ کا بجٹ سیشن شروع ہونے سے قبل وہ طلاق ثلاثہ پر کانگریس قائدین کا ایک مشاورتی اجلاس طلب کرتے ہوئے مستقبل کی حکمت عملی کا اعلان کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس ہر سال اقلیتی بجٹ میں زبردست اضافہ کررہی ہے ۔ جس سے ٹی آر ایس کے اقلیتی قائدین چیف منسٹر کو مسیحا قرار دینے سے بھی گریز نہیں کررہے ہیں ۔ جب منظورہ بجٹ 50 فیصد بھی خرچ نہیں ہورہا ہے تو اس پر چیف منسٹر سے وضاحت طلب کرنے کی بھی جرات نہیں کررہے ہیں ۔ 2014-15 تا 2017-18 تک اقلیتی بہبود کے لیے تلنگانہ حکومت نے 4579 کروڑ روپئے کے بجٹ منظور کئے جب کہ صرف 2742 کروڑ روپئے کی اجرائی عمل میں آئی ۔ اس سے اندازہ ہوگیا کہ چیف منسٹر اقلیتوں کی ترقی و بہبود کے لیے کتنے سنجیدہ ہیں ۔ اقلیتی اقامتی اسکولس محکمہ تعلیم کا حصہ ہے ۔ مگر ستم ظریفی یہ ہے کہ اس کے اخراجات اقلیتی بجٹ سے جاری کئے جارہے ہیں ۔ حکومت کے بینک قرضوں کی اسکیم ناکام ہوگئی ہے ۔ ہزاروں درخواستیں داخل کرنے کے باوجود اقلیتوں کو قرض سے محروم رکھا گیا ہے ۔ اقلیتوں کی بیشتر اسکیمات مفلوج ہوگئی ہیں ۔ فیس ری ایمبرسمنٹ اسکیم کے بقایا جات گذشتہ تین سال سے جاری نہیں کئے گئے ۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ محمد خواجہ فخر الدین نے مرکزی حکومت کی جانب سے حج سبسیڈی برخاست کرنے کے فیصلے پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ مودی کے ذریعہ این ڈی اے حکومت مسلمانوں کے خلاف ایک منظم سازش کے تحت کارروائی کررہی ہے ۔ پہلے 45 سال عمر والی خواتین کو بغیر محرم کے حج کرنے کی اجازت دی گئی ۔ پھر حج سبسیڈی برخاست کرتے ہوئے سبسیڈی کی رقم اقلیتوں کی تعلیم بالخصوص لڑکیوں کی تعلیم پر خرچ کرنے کا اعلان کیا گیا ۔ پہلے مرکزی حکومت اقلیتی بجٹ کو گھٹا دیا ہے جو بھی رقم مختص کی ہے۔ اس کا مکمل استعمال نہیں کیا ہے ۔ ریاست کے مسلمان نریندر مودی اور بی جے پی کو سبق سکھائیں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT