Tuesday , December 18 2018

بی جے پی اور آر ایس ایس فرقہ پرست جماعتیں ہیں

Farooq Abdulah at parliament House in New Delhi on Tuesday. Express Photo by Prem Nath Pandey. 01.08.2017.

آر ایس ایس کی کشمیر دشمن منصوبوں کو صرف این سی ناکام کرسکتی ہے: فاروق عبداللہ
سری نگر ، 14مارچ (سیاست ڈاٹ کام) نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمان ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے بھارتیہ جنتا پارٹی اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کو فرقہ پرست جماعتیں قرار دے دیا ہے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ جب تک نیشنل کانفرنس زندہ ہے تب تک ریاست کی وحدت، انفرادیت، اجتماعیت اور دفعہ 370 کو کوئی زک نہیں پہنچا سکتا۔ فاروق عبداللہ نے چہاشنبہ کے روز یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر نوائے صبح کمپلیکس میں مختلف تجارتی اور کاروباری انجمنوں کے نمائندوں کے علاوہ، عوامی وفود، پارٹی عہدیداران اور لیڈران کے ساتھ تبادلہ خیالات کرتے ہوئے کہا ‘مجھے یہ بات کہنے میں ذرا بھی ہچکچاہٹ محسوس نہیں ہوتی کہ نیشنل کانفرنس ریاست جموں و کشمیر کی واحد ایسی سیاسی اور عوامی نمائندہ جماعت ہے جس کی جڑیں اسی ریاست میں پیوست ہے اور یہی وہ جماعت ہے جو بی جے پی اور آر ایس ایس جیسی فرقہ پرست جماعتوں کے کشمیر دشمن منصوبوں پر پانی پھیر سکتی ہے ۔ جب تک جموں و کشمیر میں نیشنل کانفرنس کا ہل والا جھنڈا اونچا ہے تب تک یہاں کے تینوں خطوں کی وحدت، انفرادیت ، اجتماعیت اور دفعہ370کو کوئی بھی زک نہیں پہنچا سکتا’۔ فاروق عبداللہ نے ریاست میں پائے جانے والے بقول ان کے اقتصادی اور معاشی بحران پر زبردست تشویش کا اظہار کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کے موجودہ حالات کسی بھی زاویئے سے روشن مستقبل کیلئے مواقف نہیں۔ انہوں نے کہا کہ 2016کی بے چینی سے قبل تباہ کن سیلاب نے یہاں کے لوگوں کی کمر توڑ کر رکھ دی تھی اور اس کے بعد نوٹ بندی و جی ایس ٹی جیسے اقدامات نے بچی کچی کثر بھی پوری کردی۔ اس موقعے پر پارٹی جنرل سکریٹری علی محمد ساگر اور صوبائی صدر ناصر اسلم وانی بھی موجود تھے ۔ فاروق عبداللہ نے کہا کہ حکومت عوام کو دانے دانے کا محتاج بنانے پر تلی ہوئی ہے ، موجودہ مخلوط اتحاد نے ریاست کے اہم شعبوں کو بحرانوں کی نذر کردیا ہے ۔ ریاست کی 60% آبادی بلواسطہ سیاحتی شعبے پر انحصار کرتی ہے لیکن گزشتہ3برسوں میں یہ شعبہ بھی زوال پذیر ہوتا دکھائی دے رہا ہے۔
مسٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ سیاحت سے وابستہ شکارے والے ، ہاوس بوٹ والے ، ہینڈی کرافٹس ،پیپر ماشی، قالین بافی، شال دوشالے ، ووڈ کارونگ، ٹیکسی ڈائیور ، ہوٹل مالکان، دکاندار حضرات، کاریگر حضرات لاکھوں کی تعداد میں اِس صنعت سے وابستہ ہیں۔ لیکن اس وقت اس شعبہ کی بدحالی سے یہ طبقہ بدترین مالی بحران سے دوچار ہوگئے ہیں۔ عوام سے آنے والے سیاحتی سیزن کو کامیاب بنانے کے لئے اپنا رول ادا کرنے کی اپیل کرتے ہوئے فاروق عبداللہ نے کہا کہ ہماری ذمہ داری بنتی ہے کہ ہم اس اہم شعبہ کی حفاطت کریں، کیونکہ یہ شعبہ ہماری اقتصادیات میں ریڈ ھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے ۔ پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں کو پارٹی کی مضبوطی کے لئے کام کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے فاروق عبداللہ نے کہا کہ تاریخ گواہ ہے کہ نیشنل کانفرنس جموں وکشمیر کے عوام کے اعتبار ،رفاقت اور ساتھ سے ہر امتحان میں سرخرو ہو کر سامنے آئی ہے اور ریاستی عوامی نے اپنی اس آبائی جماعت کو ہر وقت اپنے دلوں میں سمائے رکھا اور ہر حال میں شیر کشمیر کی اس تنظیم کو بھر پور اعتماد دیا۔ انہوں نے کہا کہ نیشنل کانفرنس نے بھی ریاستی عوام کی جدوجہد، خوشحالی اور فارغ البالی کے لئے بے بہا قربانیاں دیں اور ہر وقت عوام کو ہی طاقت کا سرچشمہ مانا۔

TOPPOPULARRECENT