Thursday , October 18 2018
Home / Top Stories / بی جے پی اپنی کامیابی سے خوش نہیں

بی جے پی اپنی کامیابی سے خوش نہیں

۔16 نشستوں نے کانگریس اور بی جے پی کی کشتی ڈبو دی
حیدرآباد۔19ڈسمبر(سیاست نیوز) کامیابی 2 ووٹ سے ہو یا 2لاکھ ووٹ سے اسے کامیابی مانا جاتا ہے اور گجرات انتخابات کے نتائج کے دوران یہ بات سامنے آئی ہے کہ 16 ایسی نشستیں ہیں جہاں بھارتیہ جنتا پارٹی کو 2000 سے کم ووٹوں سے کامیابی حاصل ہوئی ہے جبکہ بھاتیہ جنتا پارٹی نے سادہ اکثریت سے صرف 7اضافی نشستیں حاصل کی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق گجرات انتخابی نتائج میں ان 16نشستو ں کو کافی اہمیت حاصل ہوچکی ہے کیونکہ ان پر کامیابی 200 تا2000 ووٹوں کی اکثریت سے ریکارڈ کی گئی ہے اور بعض مقامات پر بہوجن سماج پارٹی اور این سی پی کے امیدواروں کے علاوہ باغی آزاد امیدواروں نے کانگریس کے امیداروں کو شکست سے دوچار کیا ہے۔حلقہ اسمبلی گودھرا جہاں سے بھارتیہ جنتا پارٹی کو 258 ووٹوں کی اکثریت سے کامیابی حاصل ہوئی ہے اس حلقہ اسمبلی میں تیسرے نمبر پر موجود آزاد امیدوار نے 18ہزار 856 ووٹ حاصل کئے جبکہ دوسرے نمبر پر کانگریس رہی۔حلقہ اسمبلی ڈھولکہ سے جہاں بھارتیہ جنتا پارٹی کے امیدوار کو 327ووٹوں سے کامیابی حاصل ہوئی اور کانگریس کو شکست سے دوچار ہونا پڑا یہاں تیسرے نمبر پر آزاد امیدوار نے 4222ووٹ حاصل کئے جبکہ بہوجن سماج پارٹی کے امیدوار نے چوتھے نمبر پر 3139 ووٹ حاصل کئے ۔حلقہ اسمبلی فتح پورہ میں جہاں بھارتیہ جنتا پارٹی کے امیدوار نے 2711 ووٹوںسے کامیابی حاصل کی اس حلقہ میں این سی پی امیدوار نے 2747 ووٹ حاصل کئے اس کے علاوہ جنتا دل (یو) کے امیدوار نے 1989 ووٹ حاصل کئے ہیں۔حلقہ اسمبلی ویجا پور میں جہاں بھارتیہ جنتا پارٹی کو 1164 ووٹوں سے کامیابی حاصل ہوئی ہے اس حلقہ اسمبلی میں تیسرے نمبر پر موجود آزاد امیدوار نے 1555ووٹ حاصل کئے ہیں اور چوتھے نمبر پر موجود آزاد امیدوار کو 1398 ووٹ حاصل ہوئے ہیں جہاں کانگریس کے دوسرے نمبر پر موجود امیدوار کو 1164ووٹوںسے شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔حلقہ اسمبلی پوربندر سے بھارتیہ جنتا پارٹی نے 1855 ووٹوں کی اکثریت سے کامیابی حاصل کی ہے جہاں کانگریس دوسرے نمبر پر رہی اور تیسرے نمبر پر بہوجن سماج پارٹی کے امیدوار نے 4337 ووٹ حاصل کئے ہیں۔حلقہ اسمبلی ہمت نگر سے جہاں بی جے پی کو 1712 ووٹوں سے کامیابی حاصل ہوئی ہے اس حلقہ میں بھی کانگریس دوسرے نمبر پر ہے اور تیسرے نمبر پر موجود بی ایس پی امیدوار نے 1065 اور چوتھے نمبر کے آزاد امیدوار نے 739 اور پانچویں نمبر پر این سی پی امیدوار نے 692 ووٹ حاصل کرتے ہوئے بی جے پی کی کامیابی کو ممکن بنانے میں مدد دی۔حلقہ اسمبلی منسا میں جہاں بی جے پی امیدوار نے 512 ووٹوں سے کامیابی حاصل کرتے ہوئے کانگریس کو شکست دی ہے اس حلقہ میں تیسرے نمبر پر موجود آزاد امیدوار نے 1371 ووٹ حاصل کئے ۔گجرات کے کچھ حلقہ جات اسمبلی میں کانگریس کو بھی معمولی اکثریت سے کامیابی حاصل ہوئی ہے لیکن ان حلقہ جات اسمبلی کی تعدادمحدود ہے جبکہ بھارتیہ جنتا پارٹی کی وہ نشستیں جو سادہ اکثریت سے آگے ہیں ان میں بیشتر کا شمار ان نشستوں میں ہوتا ہے جن پر معمولی فرق سے کامیابی حاصل کی گئی ہے اور ان حلقو ںمیں کامیابی کا سہرا آزاد امیدواروں کو ہی جاتا ہے جنہو ںنے معمولی فرق پیدا کرنے میں اہم کردار ادا کیا ہے اور بی جے پی کی کامیابی کی راہ ہموار کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT