Saturday , December 16 2017
Home / دنیا / بی جے پی ثقافتی طور پر مسلم مخالف پارٹی دادری واقعہ انتہائی ہیبت ناک : لارڈ بھیکو پاریکھ

بی جے پی ثقافتی طور پر مسلم مخالف پارٹی دادری واقعہ انتہائی ہیبت ناک : لارڈ بھیکو پاریکھ

لندن ۔ 6 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) برطانیہ کے مشہور و معروف و کلیدی ماہر تعلیم لاڈر بھیکو پاریکھ نے ہندوستان کی ریاست اترپردیش کے دادری میں ایک شخص کی صرف اس لئے ہلاکت کہ اس کے مکان میں مبینہ طور پر بیف استعمال کیا گیا تھا، کو ایک انتہائی ہیبت ناک واقعہ قرار دیا۔ پروفیسر پاریکھ نے بغیر کسی ہچکچاہٹ کے بی جے پی کو ثقافتی طور پر مسلم مخالف قرار دیا اور کہا کہ پارٹی مسلمانوں کو ثقافتی طور پر ہندو بنانے کوشاں ہے۔ ’’اسٹیٹ آف انڈو برٹش ٹائز‘‘ کے موضوع پر ایک مباحثہ میں اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے اس بات پر تاسف کیا کہ ہندوستانی سیاست اب ذات پات تک محدود ہوگئی ہے جہاں ہر ایک کی شناخت اس کے مذہب کی بنیاد پر کی جارہی ہے۔ انہوں نے ایک بار پھر کہا کہ دادری کا واقعہ رونگٹے کھڑے کرنے والا ہے جہاں ایک مسلمان کو صرف اس لئے قتل کردیا جاتا ہے کہ اس کے گھر میں مبینہ طور پر بیف استعمال کیا گیا تھا۔ انہوں نے ایک چبھتی ہوئی بات کہی کہ ہندوستانی سیاسی پارٹیاں ہمیشہ انتخابی لڑائی میں ہی مصروف رہتی ہیں اور جہاں تک بی جے پی کا تعلق ہے، وہ انتخابات کے دور میں ہمیشہ آر ایس ایس کی جانب متوجہ ہوجاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی میں موجود شرپسند عناصر پر مودی کو نظر رکھنے اور ان کی لگام کسنے کی ضرورت ہے۔ اس موقع پر برطانیہ کے سابق سکریٹری آف اسٹیٹ برائے بزنس سرونس کیبل نے کہا کہ برطانیہ نے طلباء کے تعلق سے ویزہ کی جو نئی امیگریشن پالیسی مرتب کی ہے، اس سے سمندر پار طلباء کے تعلیمی مفادات متاثر ہوئے ہیں، خصوصی طور پر ہندوستان سے آنے والے طلباء اب برطانیہ آنے سے گریز کررہے ہیں اور آسٹریلیا، امریکہ اور کینیڈا کی جانب راغب ہورہے ہیں۔ اس موقع پر لارڈ راج لومبا نے کہا کہ 12 نومبر سے وزیراعظم نریندر مودی کے دورہ برطانیہ کے بعد حالات میں بہتری پیدا ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ہند ۔ برطانیہ تعلقات اگر ایک بار سیاسی، سماجی اور ثقافتی طور پر مستحکم ہوگئے تو اس کے مثبت اثرات دیرپا ثابت ہوں گے۔

TOPPOPULARRECENT