Friday , December 15 2017
Home / سیاسیات / بی جے پی حکومت میں ہندوستان کی ملی جلی تہذیب کو خطرہ

بی جے پی حکومت میں ہندوستان کی ملی جلی تہذیب کو خطرہ

عوام کے بنیادی اقدار اور اُصولو ں کا دفاع کرنے کیلئے مشترکہ جدوجہد ضروری، ممبئی میں اپوزیشن پارٹیوں کا جلسہ
ممبئی۔ 28 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) اپوزیشن پارٹیوں کی قائدین نے ملک کی ملی جلی تہذیب کو بچانے کیلئے متحدہ جدوجہد کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ بی جے پی زیرقیادت مرکزی حکومت میں ملک کو کئی خطرات کا سامنا ہے۔ ان میں سب سے بڑا خطرہ ہمارے ملک کی ملی جلی تہذیب کو ہے۔ ’’سانجھی وراثت بچاؤ‘‘ (ملی جلی تہذیب؍ تحریک سے خطاب کرتے ہوئے مختلف قائدین نے مودی حکومت پر الزام عائد کیا کہ اس نے قوم کو خانوں میں تقسیم کرنے والے اقدامات شروع کئے ہیں۔ کانگریس ممبئی یونٹ کے سربراہ سنجے نروپم کی جانب سے منعقدہ جلسہ میں تمام اپوزیشن پارٹیوں کے قائدین نے شرکت کی۔ جلسہ میں بی جے پی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا اور تمام قائدین کا متفقہ فیصلہ تھا کہ تمام ہم خیال پارٹیوں کو مل کر قوم کے بنیادی اقدار اور اُصولوں کا دفاع کرنا چاہئے۔ جنتا دل (یو) کے باغی لیڈر شرد یادو نے جلسہ کی صدارت کی۔ سی پی آئی ایم جنرل سیکریٹری سیتا رام یچوری، سی پی آئی لیڈر ڈی راجہ، اور کانگریس لیڈر و سابق مرکزی وزیر آنند شرما بھی اس جلسہ شریک تھے۔ آر ایل ڈی لیڈر جیئنت چودھری، صدر جھارکھنڈ وکاس مورچہ اور سابق چیف منسٹر جھارکھنڈ بابو لال مرانڈی، جنتا دل (یو) لیڈر علی انور، ٹی ایم سی ایم پی سکھدیو شیکھر راؤ، ریاستی کانگریس صدر اشوک چوہان، سماج وادی پارٹی مہاراشٹرا یونٹ صدر ابوعاصم اعظمی، ایم پی راجو شٹی اور آر جے ڈی لیڈر جئے پرکاش یادو بھی پروگرام میں شریک تھے۔ شرد یادو نے کہا کہ ہمارا دستور خطرہ میں ہے چونکہ بی جے پی زیرقیادت حکومت اس کے بنیادی اُصولوں اور اقدار کے ساتھ کھلواڑ کررہی ہے۔ اگر ہم تمام مل کر متحدہ لڑائی لریں گے تو اسی صورت میں بی جے پی کو 2019ء کے لوک سبھا انتخابات میں سمندر میں غرق کیا جاسکے گا۔

انہوںنے عوام پر زور دیا کہ وہ 8 نومبر کو ملک بھر میں نوٹ بندی کی پہلی برسی کے موقع پر کو ’’یوم سیاہ‘‘ منائیں۔ انہوں نے سوال کیا کہ سب سے پہلے ان لوگوں نے نوٹ بندی کی اور ایک سال بعد جب ہم ’’یوم سیاہ‘‘ منا رہے ہیں تو وہ لوگ ’’یوم انسداد کالا دھن‘‘ منانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس طرح حکومت یہ تسلیم کررہی ہے کہ نوٹ بندی مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے، اسی لئے وہ لوگ یوم انسداد کالا دھن منارہے ہیں۔ سنجے نروپم نے کہا کہ اس جلسہ کے ذریعہ ہم اپوزیشن کے متحد ہوجانے کا ثبوت دے رہے ہیں۔ یہ جلسہ اس بات کی گواہی دے رہا ہے کہ یہاں ہم خیال قائدین جمع ہوئے ہیں۔ نروپم ’’سانجھی وراثت بچاؤ‘‘ مہم کے کنوینر ہیں۔ اس موقع پر سیتا رام یچوری نے کہا کہ یہ معاملہ تشویشناک ہے کہ ملک کی ملی جلی ثقافت کو خطرہ پیدا ہوا ہے اور ہمارے ملک کی تہذیب پر ڈاکہ ڈالا جارہا ہے۔ سی پی آئی لیڈر ڈی راجہ نے الزام عائد کیا کہ دستور کے بنیادی اصولوں پر شدید حملے ہورہے ہیں۔ آنند شرما نے جی ایس ٹی پر عمل آوری کو ’’ٹیکس کی دہشت گردی‘‘ قرار دیا اور کہا کہ نوٹ بندی نے عوام کی کمر توڑ دی ہے۔ کانگریس لیڈر نے مزید کہا کہ جی ایس ٹی کچھ اور نہیں بلکہ یہ نئی ٹیکس دہشت گردی ہے۔ حکومت اپنے اقدامات کے ذریعہ بری طرح ناکام ہونے کا ثبوت دے رہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT