Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / بی جے پی حیدرآباد میں مجسمہ آزادی قائم کریگی

بی جے پی حیدرآباد میں مجسمہ آزادی قائم کریگی

نظام کے خلاف جدوجہد کو نصاب میں شامل کرنے پر زور ‘ ڈاکٹر لکشمن
حیدرآباد 8 ستمبر ( سیاست نیوز) بی جے پی اگر ریاست میں برسر اقتدار آجائے تو حیدرآباد میں آزادی کا مجسمہ نصب کریگی تاکہ انڈین یونین میں انضمام کیلئے نظام کے خلاف جدوجہد کرنے والوں کی لڑائی کو اجاگر کیا جاسکے ۔ پارٹی کے ریاستی صدر کے لکشمن نے یہ بات بتائی ۔ انہوں نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جس طرح سے سردار پٹیل کا مجسمہ اتحاد تیار کیا جارہا ہے اسی طرح تلنگانہ میں بی جے پی کے اقتدار پر آجانے کے بعد ہم مجسمہ آزادی کے نام سے ایک بڑی یادگار قائم کرینگے تاکہ تلنگانہ میں دی گئی قربانیوں کو اجاگر کیا جاسکے ۔ ڈاکٹر لکشمن ان کی جانب سے منعقدہ ایک ہفتہ طویل تلنگانہ وموچنا یاترا کے اختتام پر اظہار خیال کر رہے تھے ۔ انہوں نے 17 ستمبر کو سرکاری تقریب منعقد کرنے کے مطالبہ پر یہ یاترا منظم کی تھی ۔ یہ الزام عائد کرتے ہوئے کہ تلنگانہ حکومت ووٹ بینک سیاست کی وجہ سے اور مجلس کے دباؤ کی وجہ سے 17 ستمبر کی تقریب سرکاری طور پر منعقد نہیں کر رہی ہے ۔ بی جے پی نے اس مطالبہ پر یاترا کا اہتمام کیا تھا ۔ انہوں نے کچھ مخالفین کی جانب سے تنقیدوں کو مسترد کردیا اور کہا کہ یہ یاترا فرقہ وارانہ بنیادوں پر نہیں تھی ۔ انہوں نے کہا کہ نظام حکومت کے خلاف جدوجہد کرنے والے شعیب اللہ خان خود بھی مسلم اقلیت سے تعلق رکھتے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی اقتدار پر آنے کے بعد ریاست میں شعیب اللہ خان کا مجسمہ بھی نصب کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ نظام کے خلاف جدوجہد کو نصابی کتب میںشامل کیا جانا چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT