Wednesday , December 12 2018

بی جے پی رکن پارلیمنٹ و اسمبلی کے درمیان برسرِ عام مارپیٹ

واقعہ کا ویڈیو وائرل، بی جے پی اب جرائم پیشہ لوگوں کا گروپ بن رہا ہے: کانگریس
بھوپال، 18 جنوری ( سیاست ڈاٹ کام) مدھیہ پردیش حکومت کی جانب سے نکالی جا رہی ’ایکاتم یاترا‘کے دوران اگرمالوا ضلع میں برسراقتدار بی جے پی رکن اسمبلی گوپال پرمار اور رکن پارلیمنٹ منوہر اوٹوال اور ان کے حامیوں کے ساتھ زیادتی اور مارپیٹ کی واقعہ کے بعد لوگ پارٹی کاجم کر مذاق اڑارہے ہیں۔آدی شنکرآچاریہ کے درشن کو عام لوگوں تک پہنچانے کے مقصد سے نکالی جا رہی’ایکاتم یاترا‘ اگرمالوا ضلع میں پہنچی۔یاترا کے ساتھ چل رہے پرچم کو تھامنے کے معاملہ پر رکن اسمبلی گوپال پرمار کا بی جے پی ایم پی اوٹوال اور ان کے حامیوں سے جھگڑا ہو گیا۔ عوامی مقام پر پہلے تیز آواز میں بات چیت اور پھر غیر مہذب الفاظ کے ساتھ رکن پارلیمنٹ اور رکن اسمبلی میں زبردست بحث ہوگئی۔ جس کے بعد ایم پی اوٹوال نے رکن اسمبلی پر حملہ کر دیا۔ دیکھتے ہی دیکھتے دونوں کے حامی آمنے سامنے آگئے اور ایم پی حامیوں نے بھی رکن اسمبلی پر حملہ کر دیا۔جائے حادثہ پر موجود پولیس افسران نے کسی طرح دونوں کو الگ کیا۔ اس کے بعد پرمار نے میڈیا سے بات چیت میں الزام لگایا کہ ایم پی کے ساتھ آئے لوگ ’دھرم دھوج‘کی توہین کرنا چاہتے تھے ۔ اس لئے انہوں نے پرچم نہیں دیا اور اسی بات پر رکن پارلیمنٹ سے جھگڑا ہو گیا اور انہوں نے اور ان کے حامیوں نے ان کے ساتھ مارپیٹ کی۔ اس دوران اس واقعہ کا ویڈیو سوشل میڈیا میں وائرل ہونے کے بعد ریاست میں برسراقتدارپارٹی بی جے پی پر لعنت ملامت ہو رہی ہے۔پردیش کانگریس کے ترجمان کے کے مشرا نے میڈیا سے کہا کہ ’پارٹی ودآؤٹ فیرنیس‘کی بات کرنے والی بی جے پی اب سماج دشمن عناصر اور جرائم پیشہ لوگوں کا گروپ بنتا نظر آ رہا ہے۔حالیہ دنوں میں اس طرح کے کئی واقعات ریاست میں ہوئے ہیں جو یہ ثابت کرتی ہیں۔ ’ایکاتم یاترا‘کے دوران کل اگرمالوا میں ہو نے والا یہ واقعہ بتاتا ہے کہ بی جے پی کا مذہب سے کوئی لینادینا نہیں ہے ۔ ان کے لیڈرز اقتدار کے نشہ میں اپنے مفادات کو پورا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

مرکزی حکومت جھوٹ کی بنیاد پر قائم
سابق رکن پارلیمنٹ کا ریمارک
اجمیر،18جنوری(سیاست ڈاٹ کام) سابق رکن پارلیمنٹ نانا پٹولے نے الزام لگایا کہ مرکز کی بی جے پی حکومت جھوٹ کی بنیاد پر بنی حکومت ہے اور یہی حال راجستھان حکومت کا ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ مودی حکومت نے ملک کے کسانوں کے ساتھ دھوکہ کیا ہے۔ بی جے پی کی حکومت میں سب سے زیادہ کسانوں نے خودکشی کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مودی حکومت میں کسانوں کی چالیس فیصد سے زیادہ خودکشی کے واقعات ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا مودی حکومت نے انتخابات کے دوران دو کروڑ نوجوانوں کو روزگار دینے وعدہ کیا تھا تھا لیکن روزگار دینا تو دور نوٹوں کی منسوخی کے بعد صنعتی کاروبار بند ہوگئے اور لوگ بے روزگار ہوگئے۔

TOPPOPULARRECENT