Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / بی جے پی رکن کے چند تبصروں پر سونیا گاندھی برہم

بی جے پی رکن کے چند تبصروں پر سونیا گاندھی برہم

نئی دہلی۔ 12 اگست (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کے ایک رکن کی جانب سے ان کے خلاف تبصرہ پر سونیا گاندھی برہم ہوگئیں اور لوک سبھا کے وسط میں پہنچ گئیں جہاں ان کے پارٹی ارکان پہلے ہی سے موجود تھے اور شدت سے احتجاج کررہے تھے  جس کی وجہ سے ایوان کا اجلاس تقریباً ایک گھنٹہ کیلئے ملتوی کردیا گیا۔ جب اجلاس کا دوبارہ آغاز ہوا تو مرکزی وزیر پارلیمانی اُمور ایم وینکیا نائیڈو نے کہا کہ کسی بھی شخص کے خلاف کسی بھی رکن کو الزام تراشی نہیںکرنی چاہئے۔ خاص طور پر جبکہ وہ اہم قائد ہو۔ ممکن ہے کہ وہ صدر کانگریس ہو، وزیراعظم ہو یا صدر بی جے پی ہو، انہوں نے کہا کہ سونیا گاندھی کے خلاف تبصرہ بہرحال ریکارڈ میں شامل نہیں کیا گیا ہے۔ قبل ازیں بی جے پی کے ایک رکن نے سونیا گاندھی کے خلاف کالے دھن کے پس منظر میں کچھ تبصرہ کیا تھا تو کانگریس پارلیمانی پارٹی کے قائد ملکارجن کھرگے، للت مودی تنازعہ کے بارے میں بات چیت کررہے تھے۔ تبصرہ کے جواب میں صدر کانگریس کو کہتے ہوئے سنا گیا کہ ’’کیا بولا ‘‘وہ احتجاج کررہی تھیں۔ انہوں نے اسپیکر سمترا مہاجن کو مخاطب کرکے کہا کہ یہ کیا ہے ۔ ایک غیرمعمولی اقدام کرتے ہوئے وہ ایوان کے وسط میں پہنچ گئیں۔ ان کے ساتھ ان کی پارٹی کے ارکان بھی تھے۔ اسپیکر نے کہا کہ انہیں علم نہیں ہے کہ شوروغل میں کیاکہا گیا۔ اگر کوئی غیرپارلیمانی بات ہو تو اسے کارروائی سے حذف کردیں گی۔ ملکارجن کھرگے نے کہا کہ پرزور انداز میں کہا کہ معذرت خو اہی سے کم کوئی بھی بات ناقابل قبول ہے۔جب جاری شوروغل جاری رہا تو اسپیکر نے ایوان کا اجلاس ایک گھنٹے کیلئے 2:45 بجے دن تک ملتوی کردیا۔

جی ایس ٹی بل کو ترنمول کانگریس کی تائید
نئی دہلی۔ 12 اگست (سیاست ڈاٹ کام) اپوزیشن ترنمول کانگریس نے آج کہا کہ جی ایس ٹی بل کی منظوری اور اس پر عمل آوری ضروری ہے۔ اب یہ بی جے پی اور کانگریس کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس معاملے پر اپنے تنازعہ کی یکسوئی کرلیں اور ضروری کارروائی کریں ۔ پارٹی کے ترجمان ڈیرک اوبرائن نے پارلیمنٹ کے باہر کہا کہ ترنمول کانگریس کا نقطہ نظر بالکل واضح ہے ۔ ہم چاہتے ہیں کہ جی ایس ٹی بل منظور کرلیا جائے۔ ہم اس کے پابند ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بعض مسائل ہیں ۔ خاص طور پر ایک فیصد معاوضہ کی ادائیگی کے بارے میں تاہم ترنمول کانگریس کو خوشی ہے کہ مشکلات حل کرلی گئی ہیں اور حکومت نے ہماری ترمیم منظور کرلی ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT