Sunday , December 17 2017
Home / Top Stories / بی جے پی ریاستی عاملہ کے اجلاس میں ایکناتھ کھڈسے کی شرکت کانگریس اور این سی پی کے بیجا الزامات ۔ چیف منسٹر فڈنویس کا دعویٰ

بی جے پی ریاستی عاملہ کے اجلاس میں ایکناتھ کھڈسے کی شرکت کانگریس اور این سی پی کے بیجا الزامات ۔ چیف منسٹر فڈنویس کا دعویٰ

پونے ۔ 18جون ۔(سیاست ڈاٹ کام) مہاراشٹرا کے کے سابق وزیر ایکناتھ کھڈسے آج بی جے پی کی ریاستی عاملہ کے اجلاس میں شرکت کیلئے پہنچے جبکہ یہ قیاس آرائی کی جارہی تھی کہ بعض دھاندلیوں بشمول لینڈ اسکام منظرعام پر آنے کے بعد کابینہ استعفیٰ کے پیش نظر وہ پارٹی اجلاس میں شرکت نہیں کریں گے تاہم 64 سالہ بی جے پی لیڈر آج صبح 9:30 بجے اجلاس کے مقام بال گندھرو آڈیٹوریم پہنچ گئے ۔ ریاستی سطح کے اجلاس میں تنظیمی عہدیدار ، ارکان اسمبلی و پارلیمنٹ اور ریاستی وزراء شریک ہوں گے جبکہ افتتاحی اجلاس سے مرکزی وزراء ایم وینکیا نائیڈو ، پیوش گوئیل ، پرکاش جاوڈیکر اور چیف منسٹر مہاراشٹرا دیویندر فڈنویس ، ریاستی صدر بی جے پی راؤ صاحب داتوے مخاطب کریں گے ۔

ریاستی کابینہ میں ایکناتھ کھڈسے کا دوسرا مقام تھا جنھوں نے مختلف الزامات بشمول پونے میں اراضیات معاملہ اور کراچی میں روپوش انڈر ورلڈ ڈان داؤدابراہیم سے موبائیل پر بات چیت اور ان کے پرسنل اسسٹنٹ کی جانب سے رشوت حاصل کرنے کے الزام کا سامنا ہونے پر 4 جون کو وزارتی عہدہ سے استعفیٰ دیدیا تھا ۔ علاوہ ازیں وہ مہاراشٹرا انڈسٹریل ڈیولپمنٹ کارپوریشن کی 3 ایکڑ اراضی کو اس کے حقیقی مالک سے صرف 3.75 کروڑ روپئے میں خریدکر تنازعہ میں پھنس گئے ہیں، جبکہ اراضی کی مارکٹ قیمت 40 کروڑ روپئے بتائی جاتی ہے ۔ دریں اثناء چیف منسٹر مہاراشٹرا دیویندر فڈنویس نے آج یہ اُمید ظاہر کی کہ سابق وزیر مالگذاری ایکناتھ کھڈسے الزامات کی تحقیقات میں بے قصور ثابت ہوں گے ۔ چیف منسٹر نے آج بی جے پی ریاستی عاملہ کے اجلاس سے مخاطب کرتے ہوئے یہ دعویٰ کیا کہ دھاندلیوں سے پاک اور دیانتداری کے ساتھ حکومت چلائی جارہی ہے ۔ لیکن اپوزیشن کانگریس اور این سی پی بلاوجہہ وزراء کو نشانہ بنارہی ہے ۔ انھوں نے الزام عائد کیا کہ این سی پی قائدین نے سرکاری پلاٹس پر قبضہ کرلیا ہے جس کی تحقیقات جاری ہے لہذا بی جے پی وزراء کے خلاف الزام عائد کرنے کا انھیں کوئی اخلاقی حق نہیں ہے ۔

TOPPOPULARRECENT