Friday , April 27 2018
Home / Top Stories / بی جے پی لوک سبھا میں سادہ اکثریت سے محروم : کانگریس

بی جے پی لوک سبھا میں سادہ اکثریت سے محروم : کانگریس

جارحیت پسندی اور غلط حکمرانی پر ووٹرس بی جے پی سے ناراض: راہول
نئی دہلی ۔ 14 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس نے آج کہا کہ ملک بھر کے عوام بی جے پی کی جارحیت پسندی اور غلط حکمرانی پر برہم ہوگئے ہیں اور اس سے نالاں ہوچکے ہیں۔ اس لئے عوام نے اسے گھر کا راستہ دکھا دیا ہے۔ ریاستوں نے ضمنی انتخابات کے نتائج نے یہ ثابت کردیا کہ بی جے پی کا زوال شروع ہوچکا ہے۔ کانگریس نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ بی جے پی لوک سبھا میں سادہ اکثریت سے بھی ’’محروم‘‘ ہوگئی ہے۔ اس نے کہا کہ بی جے پی کی اب لوک سبھا میں 271 ارکان ہیں۔ ان میں دو باغی ارکان پارلیمنٹ کیرتی آزاد اور شتروگھن سنہا شامل نہیں ہیں۔ تاہم لوک سبھا سکریٹریٹ کے مطابق پارلیمنٹ میں بی جے پی کے 274 ارکان ہیں اور اسے اپنے طور پر سادہ اکثریت کیلئے 272 ارکان کی ضرورت ہوتی ہے۔ لوک سبھا ضمنی انتخاب میں کامیاب ہونے والے اپوزیشن امیدواروں کو مبارکباد دیتے ہوئے صدر کانگریس راہول گاندھی نے آج کہاکہ آج کے نتائج سے واضح ہوگیا کہ عوام بی جے پی سے ناراض ہیں اور انہوں نے غیر بی جے پی امیدوار کے حق میں ووٹ دیا ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ کانگریس اترپردیش کو پارٹی کی تعمیرنو کی خواہشمند ہے لیکن یہ کام راتوں رات نہیں ہوگا۔ انہوں نے ہندی میں ٹوئیٹ کیا اور کہا کہ آج کے ضمنی انتخابات کے ونرس کو مبارکباد۔ آج کے نتائج سے بی جے پی کے تئیں کافی برہمی ظاہر ہوگئی اور عوام ایسے غیر بی جے پی امیدواروں کو ووٹ دیں گے جن کی کامیابی کے امکانات قوی ہوں گے۔ سماج وادی پارٹی نے لوک سبھا نشست پھولپور اور چیف منسٹر یوپی یوگی ادتیہ ناتھ کے گڑھ گورکھپور نشست بھی جیت لی ہے۔

TOPPOPULARRECENT