بی جے پی لیڈرسبرامنیم سوامی کے خلاف ایف آئی آر درج

گوہاٹی ۔ /15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی لیڈر سبرامنیم سوامی کے متنازعہ ریمارک پر کہ مساجد اور گرجا گھر صرف عمارتیں ہیں انہیں منہدم کیا جاسکتا ہے ۔ ان کے خلاف حکومت آسام نے ایف آئی آر درج کیا ہے اور انہیں انتباہ دیا ہے کہ ریاست میں ان کے داخلے پر پابندی عائد کردی جائے گی ۔ سبرامنیم سوامی گزشتہ ہفتہ ریاست میں ایک یونیورسٹی کی تقریب میں

گوہاٹی ۔ /15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی لیڈر سبرامنیم سوامی کے متنازعہ ریمارک پر کہ مساجد اور گرجا گھر صرف عمارتیں ہیں انہیں منہدم کیا جاسکتا ہے ۔ ان کے خلاف حکومت آسام نے ایف آئی آر درج کیا ہے اور انہیں انتباہ دیا ہے کہ ریاست میں ان کے داخلے پر پابندی عائد کردی جائے گی ۔ سبرامنیم سوامی گزشتہ ہفتہ ریاست میں ایک یونیورسٹی کی تقریب میں شرکت کیلئے شخصی طور پر حاضر ہوئے تھے ۔ انہوں نے مساجد اور گرجا گھروں کو صرف عبادت کے لائق عمارتیں قرار دیا تھا ۔ ان کے بیان پر مختلف تنظیموں اور پارٹیوں نے احتجاج کیا اور مذمت کی ۔ چیف منسٹر آسام ترون گوگوئی نے کہا کہ سبرامنیم سوامی کا بیان سراسر ایک طبقہ کی توہین اور دلآزاری ہے ۔ ہم ان کے خلاف کارروائی کریں گے ۔

اگر وہ اسی طرح بکواس کرتے رہیں گے تو انہیں آسام میں داخل ہونے نہیں دیا جائے گا ۔ انہوں نے حیرت کا اظہار کیا کہ آخر بی جے پی نے ان کے متنازعہ بیان پر کارروائی کیوں نہیں کی ۔ اسی دوران آسام پولیس نے سوامی کے خلاف ایف آئی آر درج کیا ہے ۔آسام کی طلبہ تنظیموں نے بھی سبرامنیم سوامی کے بیان کی مذمت کی اور کہا کہ اس طرح کے بیان سے آسام میں فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا کرنے کی کوشش ہے ۔ مرکزی وزیر پرکاش جاویدکر نے ممبئی میں کہا کہ سبرامنیم سوامی کا بیان ان کا شخصی خیال ہے ۔ پارٹی کا اس سے کوئی لینا دینا نہیں ہے ۔ ہم اس معاملے پر ان سے بات کریں گے ۔ آل آسام اسٹوڈنٹس ، آل آسام مائیناریٹی اسٹوڈنٹس یونین اور آل بوڈو لینڈ مائیناریٹی اسٹوڈنٹس یونین نے دیگر طلباء یونینوں کے ساتھ ملکر احتجاج کیا اور سبرامنیم سوامی کے پتلے نذر آتش کئے ۔

TOPPOPULARRECENT