Wednesday , December 13 2017
Home / Top Stories / بی جے پی مذہب کی بنیاد پر ووٹ نہ مانگے : کے ٹی آر

بی جے پی مذہب کی بنیاد پر ووٹ نہ مانگے : کے ٹی آر

جی ایچ ایم سی انتخابات میں ایم آئی ایم سے کوئی اتحاد نہیں ، وزیر پنچایت راج کا بیان
حیدرآباد ۔ 9 ۔ جنوری : ( آئی این این ) : وزیر پنچایت راج کے تارک راما راؤ نے آج بھارتیہ جنتا پارٹی کو مشورہ دیا کہ وہ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات کے دوران مذہب کے نام پر ووٹ مانگنے سے احتراز کرے ۔ کے ٹی آر نے کہا کہ بی جے پی کو عوام سے ووٹ مانگنے کا کوئی حق نہیں ہے کیوں کہ ریاستی بی جے پی قائدین مرکز میں اپنی پارٹی کی حکومت سے ریاست تلنگانہ کے لیے کوئی پراجکٹ یا فنڈس حاصل کرنے میں ناکام رہے ہیں ۔ لہذا بی جے پی کو ان انتخابات میں حصہ لینے اور عوام سے ووٹ لینے کی کوشش کا حق نہیں ہے ۔ بی جے پی ان جی ایچ ایم سی انتخابات کو مذہب کی بنیاد پر تفریق پیدا کرکے جیتنا چاہتی ہے ۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ جی ایچ ایم سی انتخابات میں ٹی آر ایس 100 نشستوں پر کامیاب ہوگی اور مئیر کا عہدہ اسے ہی حاصل ہوگا ۔ عوام نے کانگریس ، بی جے پی اور تلگو دیشم کو پہلے ہی مسترد کردیا ہے اب ان پارٹیوں کے لیے ریاست تلنگانہ میں کوئی ٹھکانہ نہیں ہے ۔ یہ پارٹیاں جی ایچ ایم سی انتخابات میں مقابلہ صرف اپنے وجود کا احساس دلانے کے لیے کررہی ہیں ۔ کے ٹی آر نے وضاحت کی کہ ان انتخابات میں ایم آئی ایم سے کوئی اتحاد نہیں کیا جائے گا ۔ ان کی پارٹی اپنی 18 ماہ کی حکومت کی کارکردگی کی بنیاد پر عوام سے ووٹ حاصل کرے گی ۔۔

TOPPOPULARRECENT