Sunday , June 24 2018
Home / سیاسیات / بی جے پی پر واجپائی کے راستے سے انحراف کا الزام

بی جے پی پر واجپائی کے راستے سے انحراف کا الزام

اروال (بہار) 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سابق حلیف بی جے پی پر رام مندر، دستور کی دفعہ 370 اور یکساں سیول کوڈ جیسے حساس مسائل اُٹھانے پر تنقید کرتے ہوئے چیف منسٹر بہار نتیش کمار نے آج کہاکہ بی جے پی میں اٹل بہاری واجپائی کے راستہ سے انحراف کیا ہے۔ دوسرے معنوں میں اُس نے واجپائی کی توہین کی ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ بی جے پی کا نیا اوتار پارٹی کے ق

اروال (بہار) 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سابق حلیف بی جے پی پر رام مندر، دستور کی دفعہ 370 اور یکساں سیول کوڈ جیسے حساس مسائل اُٹھانے پر تنقید کرتے ہوئے چیف منسٹر بہار نتیش کمار نے آج کہاکہ بی جے پی میں اٹل بہاری واجپائی کے راستہ سے انحراف کیا ہے۔ دوسرے معنوں میں اُس نے واجپائی کی توہین کی ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ بی جے پی کا نیا اوتار پارٹی کے قدآور ترین قائد واجپائی کے راستہ سے ہٹ گیا ہے۔ وہ ضلع اروال کے دیہات مدھو سروا میں انتخابی جلسہ سے خطاب کررہے تھے۔ اُنھوں نے کہاکہ بی جے پی نے اپنے منشور میں 3 حساس مسائل اُٹھائے ہیں جنھیں اٹل بہاری واجپائی زیرقیادت این ڈی اے نے اپنے ایجنڈہ میں شامل نہیں کیا تھا۔ ایودھیا مسئلہ کو دوبارہ مرکز توجہ بنانے پر تنقید کرتے ہوئے نتیش کمار نے کہاکہ ’’قسم رام کی کھاتے ہیں، مندر وہیں بنائیں گے، پر تاریخ نہیں بتائیں گے‘‘۔ اُنھوں نے بی جے پی کے نعرے میں معمولی سے ترمیم کرتے ہوئے اِسے ایک طنزیہ نعرہ بنادیا۔ اُنھوں نے بھگوا پارٹی پر الزام عائد کیاکہ وہ بہار کے خصوصی موقف کو مذاق کا موضوع بنارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT