Tuesday , January 23 2018
Home / سیاسیات / بی جے پی کا صاف ستھری حکمرانی کا وعدہ جھوٹا: شیوسینا

بی جے پی کا صاف ستھری حکمرانی کا وعدہ جھوٹا: شیوسینا

ممبئی 13 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) دیویندر فرنویس زیرقیادت حکومت کے ندائی رائے دہی کے ذریعہ اکثریت ثابت کرنے کے ایک دن بعد اُس کی سابق حلیف شیوسینا نے الزام عائد کیاکہ مہاراشٹرا حکومت دستوری دفعات کی خلاف ورزی کررہی ہے اور انتہائی شدید شوروغل اور ریاست کی قدیم دم گھوٹنے والی روایات کے دوران اپنی اکثریت ثابت کرچکی ہے۔ شیوسینا نے کہاکہ ب

ممبئی 13 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) دیویندر فرنویس زیرقیادت حکومت کے ندائی رائے دہی کے ذریعہ اکثریت ثابت کرنے کے ایک دن بعد اُس کی سابق حلیف شیوسینا نے الزام عائد کیاکہ مہاراشٹرا حکومت دستوری دفعات کی خلاف ورزی کررہی ہے اور انتہائی شدید شوروغل اور ریاست کی قدیم دم گھوٹنے والی روایات کے دوران اپنی اکثریت ثابت کرچکی ہے۔ شیوسینا نے کہاکہ بی جے پی کا صاف ستھری حکمرانی کا وعدہ جھوٹا ہے۔ پارٹی کے ترجمان سامنا کے ایک اداریہ میں تحریر کیا ہے کہ ایوان کے معیاروں کی خلاف ورزی اور روایات کو نظرانداز کرتے ہوئے حکومت نے ریاست کے عوام کو دھوکہ دیا ہے۔ اِس کی وجہ سے اُنھیں کبھی معاف نہیں کیا جاسکتا۔ اداریہ میں کہا گیا ہے کہ اگر بی جے پی کو اپنی اکثریت کا اتنا ہی یقین تھا تو وہ اپوزیشن پارٹیوں کے ووٹوں کی تقسیم کے مطالبہ کو قبول کرلیتی۔ اُنھیں عوام کے سامنے اِس سلسلہ میں جواب دینا ہوگا۔ کانگریس نے اسپیکر کے فیصلہ کو ’’جمہوریت کا قتل‘‘ اور شیوسینا نے مہاراشٹرا کے لئے کل کے دن کو سیاہ دن قرار دیا۔ صدر شیوسینا اودھو ٹھاکرے نے اعلان کیا کہ وہ عنقریب پوری ریاست کا دورہ کریں گے اور عوام کو موجودہ حکومت کی کارستانیوں کے بارے میں واقف کروائیں گے۔ دریں اثناء شیوسینا کے ارکان نے گورنر مہاراشٹرا سے ملاقات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT