Thursday , December 14 2017
Home / Top Stories / بی جے پی کی انتقامی سیاست کے خلاف کانگریس کارکنوں کا احتجاج

بی جے پی کی انتقامی سیاست کے خلاف کانگریس کارکنوں کا احتجاج

نریندر مودی حکومت کو گھیرتے رہیں گے۔ گھبرائیں گے نہیں: راہول گاندھی کا عزم
چینائی۔/8ڈسمبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) کانگریس کارکنوں نے آج یہاں احتجاج کرتے ہوئے تین مورتی بھون سے وزیر اعظم کی سرکاری قیامگاہ تک پیشقدمی ( مارچ ) کی کوشش کی اور یہ الزام عائد کیا کہ بی جے پی کی زیر قیادت مرکزی حکومت نیشنل ہیرالڈ کیس میں سیاسی انتقام لیتے ہوئے پارٹی اور اس کے قائدین کی امیج کو بگاڑنے کے درپہ ہے۔ دہلی کانگریس، یوتھ اور مہیلا کانگریس کے سینکڑوں کارکنوں نے وزیر اعظم کی سرکاری قیامگاہ 7ریس کورس روڈ کو جلوس کی شکل میں آگے بڑھنے کی کوشش کی۔ پارٹی قائدین کی حمایت اور بی جے پی کے خلاف نعرے بلند کئے لیکن پہلے ہی سے وہاں متعین پولیس کی بھاری جمعیت نے انہیں روک دیا۔ دہلی پردیش کانگریس صدر اجئے ماکن نے الزام عائد کیا کہ این ڈی اے حکومت پارٹی کو خوفزدہ کرنے کیلئے سیاسی انتقام پر عمل پیرا ہے سابق میں کانگریس قائدین پی چدمبرم اور ویر بھدرا سنگھ کو نشانہ بنایا گیا تھا اور اب پارٹی کے سرکردہ قائدین کے خلاف رسوا کن مہم چلائی جارہی ہے لیکن پارٹی اس کا موثر جواب دے گی۔انہوں نے کہا کہ ہم بی جے پی کی انتقامی سیاست کو ناکام بنادیں گے اور ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے کئے جائیں گے کیونکہ عوام کانگریس کے ساتھ ہیں

اور وہ بی جے پی کی منقسمانہ سیاست سے بخوبی واقف ہیں۔ صدر آل انڈیا مہیلا ( ویمنس ) کانگریس شوبھا ارورا نے یہ بات کہی جبکہ صدر یوتھ کانگریس امریندر سنگھ راجہ نے بتایا کہ وزیر اعظم کے عہدہ پر نریندر مودی فائز ہونے کے بعد بی جے پی انتقام کی آگ میں جھلس رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جیسے ہی نریندر مودی وزیر اعظم بن گئے وہ کانگریس لیڈروں بشمول راہول گاندھی کو نشانہ بنانا شروع کردیا۔ لیکن ہم انتقامی سیاست کا ڈٹ کا مقابلہ کریں گے۔ اگرچیکہ مقامی عدالت نے آج نیشنل ہیرالڈ کیس میں صدر کانگریس سونیا گاندھی اور ان کے فرزند راہول گاندھی اور دیگر 4کو شخصی حاضری سے استثنیٰ دے دیا ہے لیکن19 ڈسمبر کو کیس کی سماعت کے موقع پر حاضر رہنے کی ہدایت دی ہے۔ دہلی ہائی کورٹ نے کل گاندھیوں اور دیگر چار کی ایک عرضی کو مسترد کردیا تھا جس میں انہیں جاری کردہ سمن منسوخ کرنے کی استدعا کی گئی تھی ۔ دریں اثناء کانگریس ارکان پارلیمنٹ نے آج مبینہ سیاسی انتقام کے خلاف ایوان کی کارروائی مفلوج کردی جس کے نتیجہ میں لوک سبھا اور راجیہ سبھا کو ایک سے زائد مرتبہ ملتوی کردیا گیا۔ چینائی میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے نائب صدر کانگریس راہول گاندھی نے کہا کہ اگرچیکہ بی جے پی انتقامی سیاست پر عمل پیرا ہے لیکن نریندر مودی حکومت کا محاسبہ کرنے سے باز نہیں آئیں گے۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن پارٹی لیڈر کی حیثیت سے یہ فریضہ ہے کہ حکومت کی کارکردگی پر سوال اٹھائے اور یہ فریضہ ادا کرنے میں وہ ہرگز پس و پیش نہیں کریں گے۔راہول گاندھی حالیہ سیلاب سے متاثرہ کڈلورا ضلع میں امداد کی تقسیم کیلئے آئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ گاندھی خاندان کے سپوت ہیں، حکومت کے حربوں اور ہتھکنڈوں سے نہیں گھبرائیں گے اور وزیر اعظم کو بدستور گھیرتے رہیں گے۔

TOPPOPULARRECENT