Monday , June 18 2018
Home / سیاسیات / بی جے پی کی غلط حکمرانی کے 100 دن،کانگریس کا کتابچہ

بی جے پی کی غلط حکمرانی کے 100 دن،کانگریس کا کتابچہ

نئی دہلی ۔ 17 ۔ ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس نے آج بی جے پی کی ’’غلط حکمرانی کے 100 دن‘‘ پر ایک کتابچہ پیش کرتے ہوئے اجاگر کیا کہ لوک سبھا الیکشن کے بعد حالیہ تمام ضمنی چناؤ کے نتائج ’’بے مصرف حکومت کے کھوکھلے وعدوں‘‘ کے بارے میں ’’عوام کی برہمی‘‘ کی عکاسی کرتے ہیں۔ برسر اقتدار پارٹی کا زوال ’’نمایاں رجحان‘‘ ہے جو بی جے پی کو ’

نئی دہلی ۔ 17 ۔ ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس نے آج بی جے پی کی ’’غلط حکمرانی کے 100 دن‘‘ پر ایک کتابچہ پیش کرتے ہوئے اجاگر کیا کہ لوک سبھا الیکشن کے بعد حالیہ تمام ضمنی چناؤ کے نتائج ’’بے مصرف حکومت کے کھوکھلے وعدوں‘‘ کے بارے میں ’’عوام کی برہمی‘‘ کی عکاسی کرتے ہیں۔ برسر اقتدار پارٹی کا زوال ’’نمایاں رجحان‘‘ ہے جو بی جے پی کو ’’بے نقاب کرتے ہوئے‘‘ بتدریج زور پکڑے گا۔ کانگریس نے ’’مودی حکومت۔بی جے پی حکومت کی سچائی: غلط حکمرانی کے 100 دن‘‘ کے زیر عنوان اپنے کتابچہ میں دعویٰ کیا ہے کہ بی جے پی بتدریج بے نقاب ہوتی جائے گی۔ پارٹی ترجمان آنند شرما کے جاری کردہ کتابچہ میں اے آئی سی سی نے کہا کہ اب تک کی کہانی صرف نعروں اور مزید نعروں پر مبنی ہے۔ قوم کو تجسس ہے کہ اس حکومت کی بقیہ میعاد میں ہندوستان کیلئے جانے کیا رکھا ہے۔

یہ اشارہ دیتے ہوئے کہ بی جے پی کیلئے زبردست جیت اب ہار میں بدل رہی ہے، کانگریس پارٹی نے کہا کہ 2014 کے لوک سبھا انتخابات کے بعد منعقدہ تمام ضمنی چناؤ کے نتائج عوام کی برہمی اور بی جے پی کی نفرت اور انتشار کی سیاست کو مسترد کردیئے جانے کی عکاسی کرتے ہیں۔ پارٹی نے نشاندہی کی کہ 54 اسمبلی حلقوں میں جہاں ضمنی انتخابات منعقد کئے گئے، بی جے پی نے مئی 2014 ء میں 42 حلقوں میں سبقت حاصل کی تھی جو اب گھٹ کر صرف 21 حلقوں تک محدود رہ گئی ہے۔ مودی حکمرانی اور اس کے تیقنات کو ’’نکمی سرکار کے کھوکھلے وعدے‘‘ قرار دیتے ہوئے کانگریس نے کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی کی 100 روزہ حکمرانی نے دکھایا کہ انہوں نے انتخابی مہم میں خوابوں کے سوداگر کا رول اختیار کیا اور جھوٹے خواب بیچے۔

TOPPOPULARRECENT