Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / بی یو ایم ایس داخلہ اعلامیہ کی عدم اجرائی پر امیدواروں میں تشویش

بی یو ایم ایس داخلہ اعلامیہ کی عدم اجرائی پر امیدواروں میں تشویش

نیٹ سے مربوط کرنے کی اطلاعات ، سپریم کورٹ کے احکامات کا جائزہ لینے میں یونیورسٹی مصروف
حیدرآباد۔25اگسٹ (سیاست نیوز) یونانی میں داخلہ کے خواہشمند طلبہ و طالبات کی بڑی تعداد غیر مصدقہ اطلاعات کے سبب تشویش میں مبتلاء ہے اور انہیں اس بات کا اندازہ تک نہیں ہے کہ ریاست تلنگانہ و آندھرا پردیش میں کب بمسیٹ کی تواریخ کا اعلان کیا جائے گا؟ طبی شعبہ میں تعلیم حاصل کرنے کے خواہشمند طلبہ کیلئے تعلیمی سال 2017-18کے داخلوں میں انتہائی الجھن کا شکار رہا کیونکہ نہ صرف ایمسیٹ کے ذریعہ داخلوں کی الجھن رہی بلکہ نیٹ کے انعقاد کے باوجود بھی ایم بی بی ایس اور بی ڈی ایس میں داخلوں کے مسائل جاری رہے اور اب بھی الجھنیں جاری ہیں ان الجھنوں کے دوران بی یو ایم ایس میں داخلوں کے لئے اعلامیہ کی اب تک عدم اجرائی کے سبب مزید الجھنیں پیدا ہوتی جا رہی ہیں۔ بعض گوشوں کی جانب سے کہا جا رہاہے کہ بی یو ایم ایس میں داخلہ کیلئے نیٹ کامیاب امیدواروں کو بھی ترجیح دی جائے گی۔ ان اطلاعات کے متعلق کالوجی نارائن راؤ یونیورسٹی کے ذمہ داروں کا کہنا ہے کہ اس سلسلہ میں تاحال کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے لیکن سپریم کورٹ کے احکامات کا جائزہ لیا جا رہاہے کہ اس سلسلہ میں کیا اقدمات کئے جانے ہیں اس کا محکمہ صحت کے اعلی عہدیداروں اور حکومت سے مشورہ کے بعد ہی فیصلہ کیا جائے گا۔ ریاست آندھراپردیش میں این ٹی آر ہیلت یونیورسٹی کی جانب سے نیٹ کامیاب امیدواروں کو بی یو ایم ایس میں داخلہ دیا جائے گا۔ نیٹ کامیاب امیدواروں کو بی یو ایم ایس میں داخلہ کی اطلاعات کے سبب بمسیٹ کی تیاری کرنے والے طلبہ میںبے چینی کی کیفیت پیدا ہوچکی ہے۔ طلبہ کی تشویش میں اضافہ کی بنیادی وجہ اب تک بمسیٹ کا اعلامیہ جاری نہ کیا جانا ہے جبکہ اکٹوبر سے تعلیم کا آغاز کیا جانا ہوتا ہے اور اب صرف ایک ماہ رہ گیا ہے لیکن اہلیتی امتحان تک منعقد نہیں ہوا ہے تو طلبہ کی تشویش میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔طلبہ کا کہنا ہے کہ اگر نیٹ کامیاب طلبہ کو ہی داخلہ دیا جاتااہے تو ایسی صورت میں بمسیٹ کے انتظار میں ڈگری میں داخلہ نہ لیتے ہوئے اعلامیہ کے منتظر طلبہ کا تعلیمی سال ضائع ہوجائے گا۔ ایمسیٹ ‘ نیٹ اور بمسیٹ کے سلسلہ میں حکومت کی لا پرواہی اورطلبہ کی صحیح رہبری نہ کئے جانے کے سبب کئی طلبہ اپنا تعلیمی سال ضائع کرچکے ہیں لیکن اب یونانی میڈیسن میں داخلہ کے خواہشمند طلبہ بھی اپنے مستقبل کے متعلق متفکر نظر آرہے ہیں۔ اولیائے طلبہ کا کہنا ہے کہ ریاستی حکومت طلبہ کو ذہنی تناؤ سے بچانے کیلئے فوری بی یو ایم ایس میں داخلہ کیلئے اہلیتی امتحان بمسیٹ کے انعقاد کا اعلامیہ جاری کرے اور اگر نیٹ کے ذریعہ ہی داخلہ دینے کا منصوبہ ہے تو اسے آئندہ سال تک کیلئے ملتوی رکھا جائے کیونکہ ایسے ہزاروں طلبہ ہیں جو نیٹ تحریر نہیں کئے ہیں اور بمسیٹ کے منتظر ہیں۔

TOPPOPULARRECENT