Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / بی یو ایم ایس داخلہ انٹرنس کا فوری اعلان کرنے کا مطالبہ

بی یو ایم ایس داخلہ انٹرنس کا فوری اعلان کرنے کا مطالبہ

حکومت کی سرد مہری سے سینکڑوں طلبہ کا مستقبل تاریک ، امیدواروں کا احتجاج

حیدرآباد۔24ستمبر(سیاست نیوز) بی یو ایم ایس انٹرنس امتحانات کے منتظر طلبہ نے آج یونانی طریقہ علاج کے متعلق حکومت تلنگانہ کے معاندانہ رویہ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ اُردو میڈیم سے تعلیم حاصل کرنے والے طلبہ کے لئے بی یو ایم ایس ہی ایک روزگار کا واحد ذریعہ باقی ہے اور اس ضمن میںحکومت کی سردمہری سے شبہ پیدا ہورہا ہے کہ حکومت اُردو میڈیم طلبہ کو نہ صرف اعلی تعلیم بلکہ روزگار سے بھی محروم کرنے کی منصوبہ سازی کررہی ہے۔طلبہ نے کہاکہ بی یو ایم ایس انٹرنس امتحانات کے منتظر طلبہ حکومت سے یونانی کالجوں میںداخلوں کی خواہش نہیں کررہے ہیںبلکہ بمسٹ انٹرنس امتحانات کی تواریخ کا اعلان کرے ،مذکورہ امتحانات میںاپنی قابلیت سے کامیابی حاصل کرنے والے طلبہ ہی بی یو ایم ایس کی تعلیم حاصل کرسکیں گے۔آج یہاں پریس کلب میں تلنگانہ کے مختلف اضلاع میں بی یو ایم ایس انٹرنس ٹسٹ کی کوچنگ حاصل کرنے کے بعد امتحانات کے منتظر تقریباً طلبہ کی نمائندگی کرتے ہوئے محترمہ سمیرہ خان (بمسٹ منتظر)نے کہاکہ تین ماہ سے زائد عرصہ گذر گیاہے اس کے باوجود ریاستی محکمہ صحت نے اب تک بی یو ایم ایس انٹرنس کی تواریخ کا اعلان نہیں کیا ہے۔انہوں نے مزید کہاکہ انٹرنس کی تیاری کرچکے طلبہ کوامتحانات کی تواریخ کا بے چینی کے ساتھ انتظار ہے ‘ مگر ریاستی محکمہ صحت کی اس جانب عدم توجہہ کے سبب طلبہ احساس کمتری کا شکار ہورہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ اس ضمن میں ریاستی وزیرصحت سی لکشما ریڈی سے بھی طلبہ کے وفد نے ملاقات کی تھی ‘ انہوں نے اندرون دویوم اس مسئلہ پر بات کرنے کا وعدہ کیاتھا مگر آج تک انہوں نے بھی کوئی جواب نہیں دیا ہے۔انہوں نے مزیدکہاکہ بی یو ایم ایس کی جملہ سیٹیں75ہیں جس کے لئے ہر سال 16سے17سو طلبہ تیاری کرتے ہیں اور جاریہ سال بھی اتنی ہی تعداد میں طلبہ نے امتحانات کی تیاری کرلی ہے مگر حکومت تلنگانہ کے رویہ سے ایسا محسوس ہورہا ہے کہ وہ طلبہ کا مستقبل سنوارنے میں غیرسنجیدہ ہے۔ سمیرہ خان نے کہاکہ بی یو ایم ایس طلبہ کا تعلق یونانی میڈیسن سے ہے اور یونانی میڈیسن کے تمام نسخے اُردو یاپھر فارسی میںہیں۔ انہوں نے مزیدکہاکہ اگر حکومت تلنگانہ حقیقت میںاُردو کے فروغ میںسنجیدہ ہے تو وہ یونانی میڈیسن کو بھی فروغ دینے کے موثر اقدامات کرے اور اتنی بڑی تعداد میںطلبہ کی زندگیوں کے ساتھ امتیازی سلوک کے بجائے امتحانات کی تواریخ کا اعلان کرے۔انہوں نے مزیدکہاکہ حکومت تلنگانہ کو چاہئے کہ وہ کالوجی نارائن رائو یونیورسٹی کو ہدایت جاری کرے کہ وہ فوری طور پر امتحانات کی تاریخ کا اعلان کرتے ہوئے بی یو ایم ایس انٹرنس ٹسٹ کے متعلق اعلامیہ جاری کرے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ بصورت دیگر کوچنگ مکمل کرلینے والے طلبہ سڑکوں پر اتر آئیں گے اور حکومت کے معاندانہ رویہ کے خلاف احتجاج منظم کریں گے اور ضرورت پڑنے پر ہم عدالت کا دروازہ کھٹکھٹائیں گے ۔ اگر اندرون دویوم حکومت انٹرنس ٹسٹ کا اعلان نہیں کرتی ہے تو احتجاج کے ساتھ ہائی کورٹ سے رجوع ہونے کا عزم ظاہر کیا۔ ایک اور امیدوارکریم النساء نے کہاکہ انٹرمیڈیٹ کے بعد انہوں نے بی یو ایم ایس کی کوچنگ شروع کردی اور اسی وجہہ سے انہوں نے ڈگری میں داخلہ نہیںلیا۔ اگر انٹرنس امتحانات تعطل کاشکار بنتے ہیںتو میرا تعلیم حاصل کرنے کا سلسلہ منقطع ہوجائے گا۔ایک اور طالب علم رئیس قمر نے کہاکہ وسائل کی کمی کے باوجود میںنے انٹرمیڈیٹ تک تعلیم حاصل کی اور ادارہ سیاست سے ملنے والی فری بی یو ایم ایس انٹرنس کوچنگ حاصل کرنے کے بعد انٹرنس کی منتظر ہیں ، اگر انٹرنس نہیں ہوگا تو ان کا مستقبل تاریک ہوجائے گا۔انٹرنس امتحانات کا انتظار کررہی ایک اور امیدوار کریم النساء نے کہا کہ بمسیٹ کوچنگ کی تیاری کے بعد انٹرنس امتحانات کے منتظر طلبہ میںامتحانات کی تاخیر کے سبب افسردگی پیدا ہورہی ہے اور دلبرداشتہ ہوکر کوئی طالب علم انتہائی اقدام اٹھاتا ہے تو اس کی ذمہ داری حکومت پر عائد ہوگی ۔اس موقع پر طلبہ نے ’’امتحانات کا انعقاد کرائو ‘‘کے نعرے لگائے اور حکومت سے عاجلانہ طو رپر انٹرنس امتحانات منعقد کرنے کا مطالبہ کیا۔ طلبہ اور اولیاء طلبہ کی کثیرتعداد موجود تھی۔

TOPPOPULARRECENT