Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / بے قاعدگیوں کے خلاف سخت کارروائی کا انتباہ

بے قاعدگیوں کے خلاف سخت کارروائی کا انتباہ

سرکاری اسکیمات، درمیانی افراد کا تدارک ضروری : ڈائرکٹر اے سی بی عبدالقیوم خاں
حیدرآباد۔/13مارچ، ( سیاست نیوز) ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو عبدالقیوم خاں نے سرکاری اسکیمات بالخصوص قرض اسکیم اور شادی مبارک میں بے قاعدگیوں کے خلاف سخت کارروائی کا انتباہ دیا ہے۔ انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ مذکورہ اسکیمات کے سلسلہ میں درمیانی افراد سے انہیں آگاہ کریں تاکہ ان کے خلاف کارروائی کی جاسکے۔ حج ہاوز میں آٹو رکشا اسکیم کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اے کے خاں نے واضح کردیا کہ اقلیتی بہبود کیلئے مختص کردہ بجٹ کا صحیح استعمال ہونا چاہیئے اور پیسہ حقیقی مستحقین تک پہنچنا ضروری ہے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ بھی یہی چاہتے ہیں کہ اسکیمات میں بے قاعدگیوں کی کوئی گنجائش نہ رہے۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ کا استعمال انتہائی دیانتداری کے ساتھ ہونا چاہیئے۔ شادی مبارک قرض اسکیم اور بعض دیگر اسکیمات میں درمیانی افراد اور بعض بے قاعدگیوں کا فوری تدارک ہونا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کی سرگرمیاں اسکیم کے اصل مقصد کو فوت کردیتی ہیں۔ عوام کو چاہیئے کہ ایسے عناصر کی نشاندہی کریں۔ اسکیم کی منظوری کیلئے جو شخص بھی رقم کا مطالبہ کرے اور جو بھی اس کے درپردہ کام کررہے ہیں ان کی نشاندہی ہونی چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ کے صحیح استعمال کے ذریعہ حکومت سے مزید بجٹ کی امید کی جاسکتی ہے۔ انہوں نے چیف منسٹر سے خواہش کی کہ اقلیتوں کیلئے مزید بجٹ مختص کیا جائے تاکہ مزید اسکیمات شروع کی جاسکیں۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت اقلیتوں کی ترقی کے معاملہ میں سنجیدہ ہے۔ جاریہ سال 70اقامتی اسکولس کا آغاز کیا جائے گا جس میں پانچویں تا ساتویں جماعت تک تعلیم ہوگی۔ حیدرآباد میں 12اسکولس قائم کئے جائیں گے۔ واضح رہے کہ حکومت نے محکمہ اقلیتی بہبود پر نگرانکار کی حیثیت سے اے کے خاں کو مقرر کیا ہے اور انہیں مکمل اختیارات دیئے ہیں اور وہ کسی بھی اقلیتی ادارہ میں مداخلت کرتے ہوئے فائیلوں کی جانچ کا اختیار رکھتے ہیں۔ اقلیتی بہبود میں حالیہ عرصہ میں بے قاعدگیوں اور اوقافی جائیدادوں سے متعلق متنازعہ فیصلوں کے بعد حکومت نے عبدالقیوم خاں کو اقلیتی بہبود کو سدھارنے کی ذمہ داری ہے۔ وہ سکریٹری اقلیتی بہبود سے بڑھ کر رتبہ رکھتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT