Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / تاج محل سے متعدد لوگوں کو روزگار، اکھلیش کا بیان

تاج محل سے متعدد لوگوں کو روزگار، اکھلیش کا بیان

Lucknow: Uttar Pradesh Chief Minister and Samajwadi Party President Akhilesh Yadav addesses a press conference at party headquarters in Lucknow on Sunday. PTI Photo by Nand Kumar (PTI2_26_2017_000150B)

17 ویں صدی کی یادگار فن تعمیر کا شاہکار، ایس پی لیڈر نے اہل و عیال کے ہمراہ تاج محل دیکھا
آگرہ۔6 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) تاج محل فن تعمیر کا شاہکار ہے، دنیا کا عجوبہ ہے اور سماج وادی پارٹی کی رائے میں سیاحوں کا سب سے زیادہ پسندیدہ یادگاری مقام ہے جو بڑی تعداد میں لوگوں کے لیے روزگار پیدا کرتا ہے، صدر پارٹی اکھلیش یادو نے یہ بات کہی۔ اکھلیش نے اپنی اہلیہ اور بچوں کے ہمراہ سفید سنگ مرمر کی یادگار کا گزشتہ روز بدرِ کامل کی رات شردپورنیما کو مشاہدہ کیا، جو ایسا موقع ہے جب چاند خصوصیت کے ساتھ زیادہ روشن اور چمکدار نظر آتا ہے۔ اکھلیش نے کہا کہ جہاں تک ہم سماج وادیوں کا معاملہ ہے، میں بس اتنا ہی کہہ سکتا ہوں کہ تاج محل بڑی تعداد میں لوگوں کو نوکریاں اور روزگار دیتا ہے، اس سے بزنس پھلتا پھولتا ہے۔ اکھلیش نے 17 ویں صدی کے اس یادگار کی بہت تعریف کی جسے مغل شہنشاہ شاہ جہاں نے اپنی بیگم ممتاز محل کی یاد میں تعمیر کرایا تھا۔ ’’اس میں کوئی شبہ نہیں کہ تاج محل فن تعمیر کا خوبصورت شاہکار ہے جس پر ہم تمام کو فخر ہے لیکن اس کے ساتھ میں سمجھتا ہوں کہ دنیا میں ایسی کوئی یادگار نہیں ہوگی جس کی تعمیر کسی شخص نے اپنے محبوب کی یاد میں کرائی ہو۔ اس لیے یہ دنیا کے عجائب میں خاص جگہ رکھتا ہے۔‘‘ انہوں نے کہا کہ تاج محل ہمیں ہماری تاریخ یاد دلاتا ہے۔ تاہم اس کا انحصار اس بات پر ہے کہ آپ خود کو تاریخ کے کس پہلو پر پاتے ہیں۔ اگر میں سمجھ لوں کہ ساری دنیا تاریکی میں ہوگی کیوں کہ آگرہ میں رات کا وقت ہے تو ایسا سمجھنا غلط رہے گا۔ اگر یہاں رات ہے تو دنیا میں کہیں صبح اور کہیں دوپہر ہوگی۔ سماج وادی پارٹی سربراہ کو قبل ازیں پارٹی کے قومی صدر کی حیثیت سے 5 سالہ میعاد کے لیے اتفاق رائے سے دوبارہ منتخب کرلیا گیا، جس کے ساتھ پارٹی پر ان کی گرفت مضبوط ہوگئی اور ان کے والد ملائم سنگھ یادو اور چچا شیوپال یادو حاشیہ پر کردیئے گئے ہیں۔ اکھلیش کے ریمارکس میڈیا کے بعض گوشوں میں ایسی اطلاعات کے پس منظر میں دیکھے جاسہے ہیں کہ حکومت اترپردیش کے محکمہ سیاحت نے ایک کتابچہ شائع کیا جس میں سیاحوں کے لیے پرکشش مقامات کی فہرست میں تاج محل کو شامل نہیں رکھا گیا ہے۔ ان رپورٹس کے بعد ریاستی حکومت نے سحافتی بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ٹورازم پراجیکٹ مالیتی 370 کروڑ روپئے کی تجویز ہے جس کے تحت 156 کروڑ روپئے مالیت کی اسکیمات آگرہ میں تاج محل اور اس کے اطراف و اکناف کے علاقوں کے لیے بنائی گئی ہیں۔ اکھلیش نے اس موقع پر اپنے ماضی کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے جب پہلی بار تاج محل دیکھا تھا تو مبہوت ہوگئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT