Sunday , January 21 2018
Home / ہندوستان / تاج محل پر متضاد دعوے افسوسناک تاریخی عمارت کو سیاسی رنگ نہ دینے کا مطالبہ

تاج محل پر متضاد دعوے افسوسناک تاریخی عمارت کو سیاسی رنگ نہ دینے کا مطالبہ

نئی دہلی۔/12ڈسمبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) تاج محل پر متضاد دعوؤں پر ترنمول کانگریس اور سماج وادی پارٹی نے آج تاریخی یادگار کو سیاسی رنگ دینے کے خلاف خبردار کیا ہے اور مطالبہ کیا کہ آثار قدیمہ کی عمارت کے موقف اور کردار سے چھیڑ چھاڑ نہ کی جائے۔راجیہ سبھا میں وقفہ صفر کے دوران یہ مسئلہ اُٹھاتے ہوئے محمد ندیم الحق ( ٹی ایم سی) نے بتایا کہ تاج محل پر کنٹرو ل کیلئے مسلمانوں کے دو فرقوں سنی اور شیعہ کی جانب سے متضاد دعوے کئے جانے کے بعد اب یہ کہا جارہا ہے کہ مغل شہنشاہ شاہ جہاں نے راجہ جئے سنگھ سے تیجو مہا لیہ ٹمپل اراضی کا ایک حصہ خریدا تھا اور یہ شیو مندر پر تعمیر کیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ تاج محل کو متنازعہ بنایا جارہا ہے کیونکہ یہ تاریخی عمارت سیاحوں کی کثیر تعداد میں کشش پیدا کرتی ہے لہذا حکومت کو چاہیئے کہ تمام تنازعوں کو ختم کرنے کیلئے فی الفور اقدامات کرے تاکہ سیاحوں کی آمد متاثر نہ ہوسکے۔ ان کے بیان کی تائید کرتے ہوئے نریش اگروال ( سماج وادی پارٹی) نے کہا کہ ایوان کو ایک قرارداد منظور کرنی چاہیئے کہ تاج محل کو سیاست کا تنازعہ نہیں بنایا جاسکتا جس کے ذریعہ تاریخی یادگار کو سیاسی رنگ دینے سے روکا جاسکتا ہے۔ نائب صدر نشین پی جے کورین نے بھی ارکان کے خیالات سے اتفاق کیا اور کہا کہ تاج محل ہمارا تاریخی ورثہ ہے اور اسے سیاسی رنگ نہیں دینا چاہیئے۔

TOPPOPULARRECENT