Tuesday , April 24 2018
Home / Top Stories / تاج محل کی دو گیٹوں کے 2 مینار گر گئے ‘ عمارت محفوظ

تاج محل کی دو گیٹوں کے 2 مینار گر گئے ‘ عمارت محفوظ

طوفانی ہواؤں اور تیز بارش کا اثر۔ متعلقہ عہدیداروں کی جانب سے تفصیلی جائزہ
لکھنو 12 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) اترپردیش کے مختلف شہروں میں کل رات تیز ہواؤں اور موسلادھار بارش سے بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی ۔ اس کے علاوہ بارش اور ہواؤں کی وجہ سے تاریخی عمارت تاج محل کے دو مختلف باب الداخلوں کے دو میناروں کو بھی نقصان پہونچا۔ عہدیداروں نے بتایا کہ کل رات 130 کیلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں چل رہی تھیںاور بارش ہو رہی تھی ان کے نتیجہ میں 12 فیٹ قامت والے مینار منہدم ہوگئے ۔ عہدیداروں نے تاہم کہا کہ تاج محل کے چاروں جانب واقع بڑے اور بلند قامت مینار مستحکم ہیں۔ کہا گیا ہے کہ شاہی باب الداخلہ ( جس سے اکثر سیاح داخل ہوتے ہیں اور یہیںسے انہیں تاج محل کی پہلی جھلک دیکھنے کو ملتی ہے ) کے اوپر موجود ایک مینار ان ہواؤں اور بارش کی وجہ سے منہدم ہوگیا ۔ دوسرا مینار جنوبی گیٹ پر تھا اور وہ بھی منہدم ہوگیا ۔ عہدیداروں نے بتایا کہ ان منہدمہ میناروں کی مرمت کا کام شروع کردیا گیا ہے ۔ علاوہ ازیں ایک پلر کے اوپر رکھا ہوا پتھر میں تراشا گلدان بھی نیچے گر پڑا ۔ شدید بارش اور تیز ہواوں کی وجہ سے جب یہ ریوتی کا باڑہ کی دیوار کا بھی کچھ حصہ متاثر ہوگیا کیونکہ اس پر ایک درخت گرا تھا ۔ سہندی بیگم مقبرہ کے قریب رکھا ہوا ایک پتھر کا گلدان بھی اس میں متاثر ہوگیا ۔ کہا گیا ہے کہ تاج محل کی اصل عمارت کو کوئی نقصان نہیں ہوا ہے ۔ عہدیداروں نے بتایا کہ حالانکہ ابتدائی کام شروع کردیا گیا ہے لیکن ہم ان نقصانات کا تفصیلی جائزہ لیں گے اور اس کے مطابق کی مرمت کا کام کیا جائیگا ۔

آندھی اور بارش سے 15 افراد ہلاک
لکھنؤ، 12 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش کے بیشتر علاقوں میں کل دیر رات آندھی کے قہرتیز رفتار ہواؤں کے ساتھ ہونے والی موسلادھار بارش سے ہزاروں ہیکٹر اراضی پر گیہوں کی فصل برباد ہو گئی جبکہ بارش کے حادثوں میں کم از کم 15 لوگوں کی موت ہوگئی۔ متھرا، سہارنپور، میرٹھ، ہاپوڑ، کانپور، ہمیر پور اور مودھا سمیت ریاست کے کئی علاقوں میں طوفانی ہواؤں سے سینکڑوں درخت گر گئے ۔

TOPPOPULARRECENT