Sunday , September 23 2018
Home / ہندوستان / تاج محل کے تحفظ میں مہلک لاپرواہی کا مرکز پر الزام

تاج محل کے تحفظ میں مہلک لاپرواہی کا مرکز پر الزام

نئی دہلی ۔11 جولائی ۔( سیاست ڈاٹ کام ) سپریم کورٹ نے آج مرکزی حکومت اور عہدیداروں کو تاج محل کے تحفظ سے ’’مہلک لاپرواہی ‘‘ برتنے کا الزام عائد کرتے ہوئے اُنھیں ہدایت دی کہ تاج محل کے تحفظ کے اقدامات کئے جائیں ۔ سپریم کورٹ نے اس مسئلہ کو عہدوسطیٰ کی تاریخی عمارت کے تحفظ کا مسئلہ قرار دیا اور کہا کہ مرکز کی یہ لاپرواہی خوفناک ہے ۔ سپریم کورٹ نے حکومت یوپی پر بھی برہمی ظاہر کی جو اس سلسلے میں کوئی نظریہ پیش کرنے سے اور تاریخی عمارت کا تحفظ کرنے سے قاصر ہے ۔ سپریم کورٹ نے مرکز کو ہدایت دی کہ فوری اقدامات کی تفصیل سپریم کورٹ میں داخل کی جائیں اور تاریخی افسانوی عمارت کے تحفظ کے لئے حکومت کے مجوزہ اقدامات سے بھی عدالت کو واقف کروایا جائے ۔ یہ فیصلہ جسٹس ایم ایم لوکر اور جسٹس دیپک گپتا پر مشتمل بنچ نے کیا اور حکومت سے ٹھوس اقدامات کرنے کی خواہش کی۔ عدالت نے کہاکہ تاج محل کے تحفظ کیلئے حالانکہ ایک پارلیمانی کمیٹی قائم ہے ۔

TOPPOPULARRECENT