Monday , July 16 2018
Home / Top Stories / تاج محل کے تحفظ کیلئے ’’ویژن ڈاکیومنٹ‘‘ داخل کرنے کی ہدایت

تاج محل کے تحفظ کیلئے ’’ویژن ڈاکیومنٹ‘‘ داخل کرنے کی ہدایت

تاریخی عمارت کے اطراف اچانک ہلڑ بازی و شور کی تفصیلات پیش کرنے عدالتی حکم
نئی دہلی 8 فروری (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج اترپردیش حکومت کو ہدایت دی کہ وہ تاج محل کے تحفظ اور اس کی خوبصورتی کی برقراری کیلئے کئے جانے والے اقدامات سے متعلق ایک ’’ویژن ڈاکیومنٹ‘‘ کو چار ہفتوں کے اندر عدالت میں داخل کرے۔ سپریم کورٹ نے ریاستی حکومت کو یہ بھی ہدایت دی ہے کہ وہ اس تاریخی عمارت کے اطراف و اکناف میں اچانک پیدا ہونے والے شور اور ہلڑ بازی و تجارتی سرگرمیوں کے بارے میں بھی وضاحت کرے۔ تاج ٹرپیزن زون کے تحت یہاں کوئی صنعت قائم نہیں کی جاسکتی مگر یہاں چمڑے کی صنعتوں اور ہوٹلوں کو اجازت دی گئی ہے۔ آخر یہ اجازت کیوں اور کس لئے دی گئی اس کی بھی وضاحت کی جائے۔ ٹی ٹی زیڈ ایک علاقہ تک محدود ہے جو یوپی کے اضلاع آگرہ، فیروز آباد، متھرا، ہتھارس، انیاہ تک 10,400 مربع کیلو میٹر تک پھیلا ہوا ہے۔ اس کے علاوہ راجستھان میں بھرت پور تک کا علاقہ ٹی ٹی زیڈ علاقہ شمار ہوتا ہے۔ جسٹس ایم پی لوکر اور دیپک گپتا پر مشتمل بنچ نے کہاکہ ریاستی حکومت اپنے ویژن ڈاکیومنٹ کو چار ہفتوں کے اندر داخل کردے۔ اس کے علاوہ ٹی ٹی زیڈ کے اندر اچانک تجارتی صنعتی سرگرمیوں میں اضافہ شور شرابے کی تفصیلات بھی داخل کرے۔ یہاں چمڑے کی صنعتوں اور ہوٹلوں کے قیام کی اجازت کیوں دی گئی۔ سپریم کورٹ کی بنچ نے ایڈیشنل سالیسٹر جنرل آف انڈیا تشار مہتا سے کہاکہ وہ اپنی حکومت کے موقف کو چار ہفتوں میں پیش کردیں۔

TOPPOPULARRECENT