Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / تاریخی مکہ مسجد کی چھت کی درستگی اور تعمیر و تزئین کا پراجکٹ

تاریخی مکہ مسجد کی چھت کی درستگی اور تعمیر و تزئین کا پراجکٹ

اے کے خاں اور سید عمر جلیل کا دورہ اور درپیش مسائل سے واقفیت ، رمضان سے قبل کاموں کی تکمیل پر زور
حیدرآباد۔ 7 مارچ (سیاست نیوز) تاریخی مکہ مسجد کی چھت کی درستگی اور دیگر تعمیر و تزئین کے کاموں کی عاجلانہ تکمیل کے سلسلے میں حکومت کے مشیر برائے اقلیتی اُمور اے کے خاں اور سیکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے آج مکہ مسجد کا دورہ کیا اور درپیش مسائل سے واقفیت حاصل کی۔ حکومت نے تاریخی مسجد کی مخدوش ہورہی چھت اور عمارت کی دیواروں میں خودرو پودے اُگ آنے سے امکانی نقصانات سے بچاؤ کیلئے ماہرین کے ذریعہ پراجیکٹ تیار کیا ہے۔ اس پراجیکٹ کے تحت 8 کروڑ 48 لاکھ روپئے منظور کئے گئے اور کام کی تکمیل تقریباً دیڑھ سال میں مکمل ہوگی۔ عہدیداروں کے معائنہ کے موقع پر ڈائریکٹر آرکیالوجی کے علاوہ آر اینڈ بی اور آثار قدیمہ کے ماہرین موجود تھے۔ اے کے خاں اور عمر جلیل نے مسجد کے مختلف حصوں کا دورہ کرتے ہوئے صورتحال کا جائزہ لیا۔ خاص طور پر عمارت کی چھت سے پانی اُترنے کے مقامات کو دیکھا جہاں احتیاطی طور پر حد بندی کردی گئی۔ ایسے وقت جبکہ رمضان المبارک کے آغاز کو صرف تین ماہ باقی ہیں، پراجیکٹ کی تکمیل ممکن نہیں۔ کم سے کم ہنگامی طور پر چھت کی درستگی پر توجہ دی جانی چاہئے۔ آرکیالوجی کے ماہرین نے چھت کا معائنہ کرتے ہوئے اس بات کا جائزہ لیا کہ حقیقی چھت کے اوپر سیمنٹ اور ڈامبر کی کتنی پرتیں ہیں۔ چھت کی درستگی کیلئے ان پرتوں کو نکالنا پڑے گا۔ رمضان المبارک کے فوری بعد بارش کا آغاز ہوگا لہذا کسی متبادل منصوبہ پر غور کیا جارہا ہے تاکہ چھت محفوظ رہے۔ عہدیداروں کے دورہ کے موقع پر مسجد کی گنبدوں، دیواروں میں جھاڑیاں صاف طور پر دکھائی دے رہی تھیں جن کی صفائی پر کئی برسوں سے توجہ نہیں دی گئی۔ اے کے خاں کے دورہ کے پیش نظر مسجد میں جگہ جگہ اقامتی اسکولس کے پوسٹرس لگائے گئے تھے۔ دورہ کی خصوصیت یہ تھی کہ ملازمین مکہ مسجد کو اپنے مسائل پیش کرنے سے روک دیا گیا جو گزشتہ چار ماہ سے تنخواہوں سے محروم ہیں۔ مقامی رکن اسمبلی نے اس جانب عہدیداروں کی توجہ مبذول کی جس پر بتایا گیا کہ بجٹ جاری کردیا گیا ہے اور بہت جلد ملازمین کے اکاؤنٹ میں تنخواہ پہنچ جائے گی۔ مکہ مسجد کے سپرنٹنڈنٹ عبدالقدیر صدیقی نے تفصیلات سے واقف کرایا اور بتایا کہ مکہ مسجد کے اطراف پیدل راہرو پراجیکٹ کے سبب مصلیوں کو مشکلات پیدا ہوسکتی ہیں، لہذا مسجد کی دونوں جانب پارکنگ کا انتظام ہونا چاہئے۔ انہوں نے پارکنگ کامپلیکس کی تعمیر کیلئے مہاجرین کیمپ کی اراضی کی نشاندہی کی۔ مہاجرین کیمپ تا جلو خانہ نئی سڑک کی تعمیر میں مسجد کے تحت 400 گز زمین حاصل کی گئی ہے جس کا معاوضہ تقریباً 4 کروڑ 20 لاکھ روپئے آئے گا۔ اس رقم سے پارکنگ کامپلیکس تعمیر کیا جاسکتا ہے۔ عہدیداروں نے بتایا کہ بہت جلد تعمیری کاموں کا آغاز کیا جائے گا۔ مکہ مسجد کی عمارت کے تحفظ کے علاوہ الیکٹریکل اور لاؤڈ اسپیکر سسٹم کو بھی عصری بنایا جائے گا۔ مکہ مسجد میں موجود 23 سی سی ٹی وی کیمرے غیرکارکرد ہیں، ان کی جگہ 43 نئے کیمرے لگانے کی تجویز ہے۔ حکومت نے جو رقم الاٹ کی ہے، اس کے تحت تمام ضرورتوں کی تکمیل کی جائے گی۔ مکہ مسجد کے اسٹاف نے مخلوعہ جائیدادوں پر بھرتی اور ہوم گارڈس کی تعداد میں اضافہ کی جانب توجہ مبذول کروائی تاکہ مسجد کی سکیورٹی اور صفائی کے انتظامات بہتر بنائے جاسکیں۔

TOPPOPULARRECENT