Wednesday , April 25 2018
Home / کھیل کی خبریں / تاریخ رقم کرنے کیلئے ہندوستان کو مزید انتظار،چوتھا میچ افریقہ کے نام

تاریخ رقم کرنے کیلئے ہندوستان کو مزید انتظار،چوتھا میچ افریقہ کے نام

میزبان کی سیریز میں توقعات برقرار،گلابی جرسی میںافریقہ کا ناقابل تسخیر رہنے کا ریکارڈ قائم

جوہانسبرگ 11 فروری (سیاست ڈاٹ کام) جنوبی افریقہ کی سرزمین پر ونڈے سیریز کی جیت سے صرف ایک قدم دور ہندوستانی ٹیم کو چوتھے ونڈے میں شکست سے دو چار ہونا پڑا ۔مسلسل تین میچوں میں میزبان کے خلاف جیت درج کر کے اعتماد سے پر کوہلی اینڈ کمپنی کے پاس جیت کے ساتھ 25 سال بعد سیریز پر قبضہ کرکے تاریخ رقم کرنے کا موقع تھا لیکن میزبان ٹیم نے میچ کو 5 وکٹوں سے جیت کر صورتحال تبدیل کردی ۔ اس شکست کے ساتھ اب ہندوستان کو افریقی سرزمیں پر پہلا ونڈے سیریز جیتنے کے لئے مزید میچ کا انتظار اور بہتر کھیل کا مظاہرہ کرنا ہوگا ۔واضح رہے کہ کلرملر کے نام سے مشہور ڈیوڈ ملر (39) اور وکٹ کیپر بلے باز ہنرک کلاسین (43) کے بعد ایڈلے فھلکوایو (پانچ گیندوں پر ناٹ آوٹ 23 رن) کی دھماکہ خیز اننگز کی بدولت جنوبی افریقہ نے چوتھے میچ میں ہندستان کو ہفتہ کو بارش سے متاثرہ مقابلے میں ڈک ورتھ لوئیس قانون کے تحت پانچ وکٹ سے شکست دے کر چھ میچوں کی ون ڈے سیریز میں 1۔3 سے واپسی کر لی۔ جنوبی افریقہ نے اس جیت کے ساتھ ہی سیریز میں اپنی توقعات کو برقرار رکھا ہے ۔ہندستان نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے سات وکٹ پر 289 رنز بنائے ۔ہندستان سے ملے 290 رن کے ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے میزبان جنوبی افریقہ نے 7.2 اوور میں ایک وکٹ پر 43 رنز بنا لئے تھے اور تبھی بارش آگئی۔بارش کی وجہ سے کھیل تقریبا ڈیڑھ گھنٹے تک رکا رہا۔اس کے بعد جب کھیل دوبارہ شروع ہوا تو جنوبی افریقہ کو 28 اوور میں 202 رن کا نظر ثانی ہدف دیا گیا جسے جنوبی افریقہ نے 25.3 اوور میں پانچ وکٹ پر 207 رن بنا کر حاصل کر لیا۔جنوبی افریقہ کے لئے ملر نے 28 گیندوں پر چار چوکوں اور دو چھکوں کی بدولت 39 جبکہ کلاسین نے 27 گیندوں پر پانچ چوکوں اور ایک چھکے کی بدولت 43 رنز بنائے ۔اس کے علاوہ چوٹ کے بعد چوتھے میچ میں واپس آئے اے بی ڈی ولیرس نے 18 گیندوں پر 26 رن میں ایک چوکا اور دو چھکے اڑایے ۔فھلکوایو نے پانچ گیندوں پر ایک چوکے اور تین چھکوں کے دم پر 23 رن کی دھماکہ خیز اننگز کھیل کر جنوبی افریقہ کی جیت یقینی بنا دی۔اس کے علاوہ ھاشم آملہ نے 40 گیندوں پر چار چوکوں کی بدولت 33 اور ایڈین مارکرم نے 23 گیندوں پر تین چوکوں کی مدد سے 22 رنز کی مفید اننگز کھیلی۔جے پی ڈومنی نے 10 رن بنائے ۔ہندستان کے لئے کلدیپ یادو نے 51 رن پر دو وکٹ، جسپریت بمراہ نے 21 رن پر ایک وکٹ، ہردک پانڈیا نے 37 رن پر ایک وکٹ اور یجویندر چہل نے 68 رن پر ایک وکٹ حاصل کئے ۔کینسر کے تئیں لوگوں کو بیدار کرنے کے لئے جنوبی افریقہ چوتھے میچ میں گلابی جرسی میں اتری تھی۔جنوبی افریقہ نے اس سے پہلے چھ میچ گلابی جرسی میں کھیلے تھے جس میں وہ ناقابل شکست رہا تھا اور اس نے اپنے اس ریکارڈ کو یہاں بھی قائم رکھا۔ اس سے پہلے اوپنر شکھر دھون (109) کے کیریئر کے 100 ویں میچ میں بنائی گئی شاندار سنچری اور کپتان وراٹ کوہلی (75) کے درمیان دوسرے وکٹ کے لئے ہوئی 158 رنز کی سنچری شراکت کی بدولت ہندستان نے مقررہ 50 اوور میں سات وکٹ پر289رنز کا مضبوط اسکور بنایا۔بارش کی وجہ سے جنوبی افریقہ کو 28 رنز میں 202 رن کا نظر ثانی ہدف ملا جو اس نے 25.3 اوور میں پانچ وکٹ پر 207 رن بنا کر حاصل کر لیا ہندستان نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرنے کا فیصلہ کیا۔اوپنر روہت شرما ایک بار پھر ناکام رہے اور 13 گیندوں پر ایک چوکے کی مدد سے پانچ رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے ۔کیگسو ربادا نے روہت کو اپنی ہی گیند پر کیچ کیا ۔ اس دورے پر ربادا اب تک چھ بار روہت کو آؤٹ کر چکے ہیں۔روہت کے آؤٹ ہونے کے بعد کپتان وراٹ کوہلی (75) اور شکھر (109) کے درمیان دوسرے وکٹ کے لئے 158 رن کی سنچری شراکت ہوئی۔اس سیریز میں وراٹ اور شکھر کے درمیان یہ مسلسل دوسری سنچری شراکت ہے ۔وراٹ ٹیم کے 178 کے اسکور پر آؤٹ ہوئے ۔ وراٹ نے 83 گیندوں پر سات چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے شاندار 75 رنز بنائے اور اپنے ون ڈے کیریئر کی 46 ویں نصف سنچری مکمل کی۔

TOPPOPULARRECENT