Tuesday , January 23 2018
Home / ہندوستان / تبدیلی مذہب تنازعہ کے سرغنہ پر پولیس انعام

تبدیلی مذہب تنازعہ کے سرغنہ پر پولیس انعام

لکھنؤ ۔ 12 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) مقامی پولیس نے کشوری لال پالمیکی کی گرفتاری کیلئے نقد انعام کا اعلان کیا ہے، جو آگرہ میں زیادہ تر مسلم سلم بستی کے لگ بھگ 100 افراد کی ہندومت میں ’’جبری تبدیلی مذہب‘‘ کا اصل ملزم ہے، ایک اعلیٰ عہدیدار نے آج یہ بات کہی۔ انسپکٹر جنرل (آئی جی) لا اینڈ آرڈر اے ستیش گنیش نے یہاں کہا کہ آگرہ پولیس نے وہاں پر م

لکھنؤ ۔ 12 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) مقامی پولیس نے کشوری لال پالمیکی کی گرفتاری کیلئے نقد انعام کا اعلان کیا ہے، جو آگرہ میں زیادہ تر مسلم سلم بستی کے لگ بھگ 100 افراد کی ہندومت میں ’’جبری تبدیلی مذہب‘‘ کا اصل ملزم ہے، ایک اعلیٰ عہدیدار نے آج یہ بات کہی۔ انسپکٹر جنرل (آئی جی) لا اینڈ آرڈر اے ستیش گنیش نے یہاں کہا کہ آگرہ پولیس نے وہاں پر مبینہ جبری تبدیلی مذہب کے اصل ملزم کشوری لال بالمیکی کی گرفتاری پر 5 ہزار روپئے کے نقد انعام کا اعلان کیا ہے۔ آئی جی نے کہا کہ ایک مقامی عدالت نے بھی بالمیکی کے خلاف ناقابل ضمانت وارنٹ جاری کئے ہیں اور اس کے موبائیل فون پر نگرانی رکھی جارہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ آگرہ پولیس عنقریب مغربی بنگال کو ایک ٹیم بھیجے گی تاکہ ان لوگوں کے اصل مقام کی تصدیق کی جاسکے جو مبینہ طور پر مذہب کی تبدیلی کیلئے مجبور کئے گئے۔ یہ تردید کرتے ہوئے کہ متاثرین میں سے کسی نے بھی اس مقعام کو نہیں چھوڑا ہے، گنیش نے کہا کہ چونکہ وہ حالیہ واقعہ کے بعد خوفزدہ ہیں اس لئے متعلقہ پولیس اسٹیشن انہیں سیکوریٹی فراہم کررہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT