تحریک تلنگانہ میں سرگرم حصہ لینے کے باوجود عہدوں کی عدم فراہمی

نظام آباد کے ٹی آر ایس کارکنوں میں مایوسی، مشن کاکتیہ پروگرام میں شرکت سے گریز

نظام آباد کے ٹی آر ایس کارکنوں میں مایوسی، مشن کاکتیہ پروگرام میں شرکت سے گریز
نظام آباد:12؍ اپریل(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)تلنگانہ تحریک میں زبردست سرگرم رہتے ہوئے کیسوں کی پرواہ کئے بغیر ہی کام کرتے ہوئے ٹی آرایس کی کامیابی میں اہم رول ادا کرتے ہوئے معاشی طور پر نقصانات اٹھانے کے باوجود بھی پارٹی میں حکومت میں مناسب مقام حاصل نہ ہونے پر ٹی آرایس کارکنوں میں مایوسی پائی جارہی ہے اور نامزد عہدوں کے حصول کیلئے کوشاں ہے۔ ضلع نظام آباد میں علیحدہ ریاست تلنگانہ تحریک ریاست بھر میں سرفہرست رہی اور نظام آباد میں ٹی آرایس کو سب سے پہلے ضلع پریشد پر اقتدار حاصل ہونے کا ٹی آرایس کو اعزاز حاصل ہوااور اس کے بعد ٹی آرایس کارکنوں میں زبردست جوش پیدا ہوا اور تلنگانہ کے قیام تک ٹی آرایس کارکن دلچسپی کے ساتھ علیحدہ ریاست تلنگانہ تحریک میں سرگرم رہے اور تلنگانہ حکومت کے قیام کے 10 ماہ کا وقفہ گذرنے کے باوجود بھی اہم قائدین کو ابھی تک کوئی نامزد عہدہ فراہم نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے ٹی آرایس کارکن میں مایوسی پائی جارہی ہے۔ ٹی آرایس کے آغاز کے بعد سے ضلع میں کئی کارکن پارٹی سے وابستہ ہوتے ہوئے اپنے کام کاج کو ترک کردیااور ایک ہی مقصد کے تحت تلنگانہ تحریک میں سرگرم رہے اور ٹی آرایس کی جانب سے کئے گئے ہر پروگرام کی کامیابی میں جدوجہد کرتے ہوئے اسے کامیاب بنانے اور تلنگانہ کیلئے اپنے کاروبار کو ترک کرنے کی وجہ سے کئی قائدین کو معاشی طور پر بھی کمزور ہونا پڑاجس کی وجہ سے انہیں کئی مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے اور معاشی طورپر کمزور ہونے کی وجہ سے معاشی بحرانیوں کے شکار میں مبتلا ہے ۔تلنگانہ کے قیام کے بعد منعقدہ انتخابات میں ضلع کے 9حلقہ اسمبلی اور دو پارلیمانی حلقہ میں ٹی آرایس کی کامیابی میں کارکن اور قائدین کا اہم دخل ہے۔ ضلع میں منعقدہ تنظیمی انتخابات میں اہم قائدین کو نظر انداز کرنے کی وجہ سے بھی کارکنوں میں ناراضگی پائی جارہی ہے بالخصوص اقلیتی طبقہ کو انتخابات کے بعد مسلسل نظر انداز کرنے کی بھی شکایت عام ہے۔ انتخابات سے قبل تحریک میں جو کارکن سرگرم رول ادا کیا تھا ان کارکنوں کو انتخابات کے بعد نظر انداز کرنے کی شکایت بھی عام ہے اور شہر میں ایک ہفتہ قبل منعقدہ تنظیمی انتخابی اجلاس میں اقلیتی قائدین اس بات کی ناراضگی بھی ظاہر کی تھی ضلع میں تشکیل دی گئی دیہی کمیٹیاں اور منڈل کمیٹیوں میں اہم قائدین کو نہ شامل کئے جانے کی وجہ سے مشن کاکتیہ پروگرام میں بھی ٹی آرایس کارکنوں کی حاضری معمولی رہ رہی ہے اور ارکان اسمبلی کے گروپ کے علاوہ دیگر گروپوں کو نظر اندازکرنے کی شکایت بھی عام ہے اورانتخابات کے موقع پر پارٹی میں شامل ہونے والے افراد کو کنٹراکٹ کے کام دئیے جانے پر بھی اعتراضات کئے جارہے ہیں اور اس بات سے ہائی کمان کو واقف کرانے کے باوجود بھی ہائی کمان سینئر کارکنوں کی شکایت کو دور کرنے میں ناکام ہونے کا بھی الزام عائد کررہے ہیںاور اس بارے میں چند قائدین چیف منسٹر کو واقف کرانے کے باوجود بھی ابھی تک مسئلہ کا حل نہیں ہواہے جس کی وجہ سے سینئر قائدین اور کارکنوں میں موجودہ ناراضگی کو دور کرتے ہوئے پارٹی کو مستحکم کرنے کی خواہش کررہے ہیںورنہ آنے والے دنوں میں پارٹی کیلئے نقصاندہ ثابت ہوسکتا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT