Tuesday , September 18 2018
Home / سیاسیات / تحریک عدم اعتماد کو انا ڈی ایم کے اور کمیونسٹوں کی تائید

تحریک عدم اعتماد کو انا ڈی ایم کے اور کمیونسٹوں کی تائید

ترنمول کانگریس اور شیوسینا کی حمایت بھی متوقع
نئی دہلی 16 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) آندھراپردیش کو خصوصی موقف دینے سے مرکز کے انکار پر برہم تلگودیشم پارٹی کی مودی حکومت کے خلاف لوک سبھا میں پیش کی جانے والی تحریک عدم اعتماد کو کانگریس، سی پی آئی (ایم)، انا ڈی ایم کے اور عام آدمی پارٹی کی تائید حاصل ہوگئی ہے۔ سی پی آئی نے بھی تحریک عدم اعتماد کی تائید کرتے ہوئے مودی حکومت کے خلاف ووٹ دینے کا اعلان کردیا ہے ۔ آندھراپردیش سے مبینہ ناانصافی پر ناراض تلگودیشم پارٹی کی این ڈی اے سے علیحدگی کے فوری بعد ان جماعتوں نے اس تائید کا اعلان کیا ہے۔ این ڈی اے حکومت کو یہ پہلی مرتبہ تحریک عدم اعتماد کا سامنا ہے اور وہ بھی کسی اور نے نہیں بلکہ خود اس کی دیرینہ حلیف جماعت تلگودیشم پیش کررہی ہے۔ لوک سبھا میں تحریک اعتماد 50 ارکان کی تائید کی صورت میں ہی قبول کی جاسکتی ہے لیکن تلگودیشم کے صرف 16 اور وائی ایس آر کانگریس کے 9 ارکان ہیں۔ کانگریس اور انا ڈی ایم کے نے بھی اس تحریک کی تائید کا اعلان کردیا ہے۔ جن کے بالترتیب 48 اور 37 ارکان ہیں۔ سی پی آئی (ایم) نے کہا ہے کہ مرکز کی ہر محاذ پر ناکامی کو اُجاگر کرنے کی ضرورت ہے۔ اس پارٹی کے جنرل سکریٹری سیتارام یچوری نے کہاکہ اس مقصد سے ان کی پارٹی اس تحریک کی تائید کریگی۔ یچوری نے کہاکہ آندھرا پردیش کو خصوصی موقف دینے پر حکومت کی وعدہ خلافی ناقابل معافی ہے۔ مغربی بنگال کی چیف منسٹر ممتا بنرجی کی ترنمول کانگریس بھی تحریک کی تائید کرسکتی ہے۔ مختلف مسائل پر وزیراعظم مودی اور بی جے پی کی سخت ناقد شیوسینا بھی حکومت کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی تائید کرسکتی ہے۔

TOPPOPULARRECENT