Friday , July 20 2018
Home / شہر کی خبریں / تحصیلدار دفاتر کو سب رجسٹرار کا درجہ، جائیدادوں کے رجسٹریشن کی سہولت

تحصیلدار دفاتر کو سب رجسٹرار کا درجہ، جائیدادوں کے رجسٹریشن کی سہولت

آج سے تحصیلداروں کی تربیت، مارچ سے اقدامات پر عمل، آن لائن ریکارڈ رکھنے کا فیصلہ

حیدرآباد۔4فروری(سیاست نیوز) ریاست کے تمام تحصیلدار دفاتر کو سب رجسٹرار کا درجہ دیئے جانے کے علاوہ ان دفاتر میں جائیدادوں کے رجسٹریشن کے سلسلہ میں کاروائی مکمل کئے جانے کے سلسلہ میں مارچ سے اقدامات کے آغاز کو یقینی بنانے کے لئے حکومت نے تمام تحصیلداروں کو 5فروری سے 10روزہ تربیت کے آغاز کا فیصلہ کیا ہے ۔ حکومت کی جانب سے ریاست کے تمام تحصیلداروں کو سب رجسٹرار کی خدمات کی انجام دہی کا عمل انجام دینے کے لئے انہیں خصوصی تربیت فراہم کی جائے گی۔ محکمہ مال کی جانب سے تیار کردہ منصوبہ کے مطابق ریاست تلنگانہ میں حکومت کی جانب سے کئے گئے فیصلہ کو روبعمل لانے کے لئے تمام اضلاع میں موجود تحصیلداروں کو تربیت کی فراہمی یقینی بنائی جا رہی ہے تاکہ انہیں رجسٹریشن کی انجام دہی کے عمل میں کسی دشواری کا سامنا کرنا نہ پڑے۔ریاست تلنگانہ کے اضلاع میں موجود 443 تحصیلداروں کو 10 روزہ تربیت کی فراہمی کیلئے مری چنا ریڈی انسٹیٹیوٹ میں انتظامات مکمل کرلئے گئے ہیں اورکہا جا رہاہے کہ ریاستی حکومت کی جانب سے محکمہ مال اور سی سی ایل اے عہدیداروں کی نگرانی میں انہیں تربیت فراہم کی جائے گی تاکہ انہیں مارچ سے تحصیلدار کے دفتر میں شروع کئے جانے والے جائیداد کے رجسٹریشن کے عمل میں کوئی دشواری کا سامنا نہ کرنا پڑے۔بتایاجاتاہے کہ محکمہ مال نے تمام 443تحصیلداروں کو تربیت کی فراہمی کیلئے انہیں 6علحدہ علحدہ بیاچس میں منقسم کیا ہے تاکہ 28 فروری سے قبل تمام تحصیلداروں کی تربیت کا عمل مکمل کرلیا جائے ۔ ریاستی حکومت نے جائیدادوں کے رجسٹریشن اور منتقلی کے عمل کو منڈل کی سطح پر تحصیلداروں کے حوالہ کرنے اور تمام جائیدادوں کے آن لائن ریکارڈ کی موجودگی کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات کا فیصلہ کیا تھا ۔ حکومت نے ریاست میں موجدو جائیدادوں کے ریکارڈس اکٹھا کرنے کیلئے سروے کروایا اور اس بات کا فیصلہ کیا ہے کہ جائیدادوں کی خرید و فروخت کے رجسٹریشن تحصیلدار کے دفتر میں انجام دیئے جائیں اور تمام تحصیلداروں کو سب رجسٹرار کے اختیارات فراہم کئے جائیں۔ محکمہ مال کے عہدیداروں نے بتایا کہ تربیت کے دوران تمام تحصیلداروں کو اس بات سے واقف کروایا جائے گا کہ اراضیات و جائیدادوں کا تخمینہ کس طرح لگایاجائے اور رجسٹریشن اور اسٹامپ فیس کا کس طرح تعین کیا جائے۔ علاوہ ازیں انہیں رجسٹریشن کے دوران درپیش چیالنجس سے نمٹنے کی تربیت بھی فراہم کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT