Saturday , December 16 2017
Home / شہر کی خبریں / تحفظات کی فراہمی سے ہی مسلمانوں کی عظمت رفتہ کی بحالی ممکن

تحفظات کی فراہمی سے ہی مسلمانوں کی عظمت رفتہ کی بحالی ممکن

 

تحریک کا مقصد ملت کے نوجوانوں کے مستقبل کو تابناک بنانا ہے ۔ کورٹلہ میں شعور بیداری جلسہ : جناب عامر علی خاں ‘ مفتی ندیم صدیقی اور دیگر شخصیتوں کا خطاب
حیدرآباد ۔ 10 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز): خواہش سے کامیابی نہیں ملتی بلکہ کوشش کرنے سے کامیابی حاصل ہوتی ہے ۔ تحفظات مسلمانوں کا جمہوری حق ہے اور متحدہ جدوجہد سے تحفظات حاصل کئے جاسکتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار جناب عامر علی خاں نیوز ایڈیٹر روزنامہ سیاست نے کیا ۔ انہوں نے آج ضلع کریم نگر کے کورٹلہ میں مسلم دانشوروں ، اکابرین ، طلبہ ، مذہبی و سماجی تنظیموں سے وابستہ افراد کے ایک اجلاس کو مخاطب کیا ۔ روزنامہ سیاست کی جانب سے شروع کردہ حصول 12 فیصد مسلم تحفظات تحریک کے تحت اس اجلاس کا انعقاد عمل میں لایا گیا ۔ سرپرست اعلی 12 فیصد مسلم تحفظات تحریک ایڈیٹر سیاست جناب زاہد علی خاں کی خصوصی ہدایت پر نیوز ایڈیٹر جناب عامر علی خاں تلنگانہ اضلاع کے دورے کررہے ہیں تاکہ مسلمانوں میں شعور بیداری کے ذریعہ مسلم سماج کی ترقی کیلئے ضروری تحفظات کو یقینی بنایا جاسکے ۔ کورٹلہ میں اس اجلاس کا انعقاد بار اسوسی ایشن نے کیا ۔ جس کی صدارت محمد مبین پاشاہ ایڈوکیٹ و صدر بار اسوسی ایشن نے کی ۔ جناب عامر علی خاں نے کہا کہ حکومت تلنگانہ مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کرنے میں دلچسپی رکھتی ہے اور خود چیف منسٹر نے وعدہ کیا ہے ۔ تاہم ایک کامیاب سمت اور قانونی طریقہ سے تحفظات فراہم کیے جاتے ہیں تو مسلمانوں کو بغیر رکاوٹ اس کا فائدہ ہوگا اور سوائے بی سی کمیشن کسی اور ذریعہ سفارش سے مسلم تحفظات محفوظ نہیں رہیں گے ۔ جس سے خود حکومت کے اعتماد کو نقصان ہوگا ۔ انہوں نے مسلم دانشوروں علماء ، اکبرین ، طلبہ ، وکلاء ، اساتذہ اور اولیائے طلبہ سے درخواست کی وہ حصول تحفظات تک اپنی کوششوں کو جاری رکھیں اور نمائندگیوں کے سلسلہ میں اضافہ کریں ۔ انہوں نے سیاست کی جانب سے شروع کردہ تحریک جو خالص مسلم مفاد میں ہے مسلمانوں کی اس تحریک سے دلچسپی کو خوش آئند قرار دیا ۔ انہوں نے مسلمانوں سے اپیل کی کہ وہ قوم سے متعلق اپنی ذمہ داری کو سمجھیں اور سنجیدہ اقدامات کریں ۔ آج تعلیم میں کمزوری کے سبب مسلمانوں کو بے پناہ مشکلات کا سامنا ہے ۔ موجودہ دور میں مسلمانوں کو اپنی ترقی کیلئے کوشش کرنے چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ قومی ترقی کے کام کو فرض عین تصور کرنا اور جدوجہد کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے چونکہ آزادی کے بعد سے مسلمانوں کے ساتھ مسلسل نا انصافیاں جاری ہیں جو پسماندگی کی ایک وجہ ہے تاہم ماضی کے حالات پر افسوس کے بجائے سبق سیکھتے ہوئے آگے بڑھنا چاہئے ۔ ریاست تلنگانہ میں سرکاری ملازمتوں میں مسلمانوں کا فیصد بہت کم ہے اور اب موقع ہے کہ تحفظات کے ذریعہ مسلمانوں کی عظمت رفتہ بحال کی جاسکتی ہے ورنہ 20 سال تک ایسا موقع ایک لاکھ 7 ہزار ملازمتوں والا آنے والا نہیں ۔ لہذا اس موقع سے مستفید ہونے اور قوم کو فائدہ پہونچانے سیاست نے 12 فیصد مسلم تحفظات تحریک کا آغاز کیا تاکہ نوجوان مسلم نسل کا روشن و تابناک مستقبل کو یقینی بنایا جاسکے ۔ جناب عامر علی خاں نے مسلمانوں میں حوصلہ افزائی کرتے ہوئے چڑیا کی کہانی بیان کی جب چڑیا کے بچے اپنے گھر کو مالک سے لاحق خطرہ کا خوف جتاتے ہیں تو چڑیا کس طرح اطمینان سے رہتی ہے ۔ جب مالک باغ کو کاٹنے کا پہلے مزدور کو حکم دیتا ہے اور پھر بعد میں اپنے بیٹے کو حکم دیتا ہے تو چڑیا خوف نہیں کرتی جب خود مالک باغ کو کاٹنے کا بیڑا اٹھاتا ہے تو چڑیا خوف کے مارے اپنا ٹھکانا بدل دیتی ہے ۔ ٹھیک جسح طرح دوسروں کو تلقین کرنے و مشورہ دینے کے بجائے خود تحفظات کیلئے شعور بیداری کا انہوں نے بیڑا اٹھایا جس کے ثمر آور نتائج برآمد ہورہے ہیں ۔ صدر مسلم امپاورمنٹ جناب عارض محمد نے کہا کہ نیوز ایڈیٹر روزنامہ سیاست نے مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کے ثمرات سے فائدہ پہنچانے تحریک کا آغاز کیا اور مسلمان بھی تحریک کی تائید کررہے ہیں ۔ مسلمانوں کی ذمہ داری ہے کہ بھاری تعداد میں تحصیلداروں ، آر ڈی او اور کلکٹرس کے علاوہ عوامی نمائندوں منتخب نمائندوں کو یادداشتیں پیش کرکے تحفظات کو یقینی بنانے کا مطالبہ کریں ۔ کے سی آر نے شاد نگر کے جلسے میں حکومت تشکیل دینے کے چار میںماہ مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا ۔ ٹی آر ایس کے اقتدار کے 15 ماہ مکمل ہوچکے ہیں لیکن مسلمانوں سے کیا گیا وعدہ پورا نہیں کیا گیا ۔ لہذا حکومت سے اپیل کرتے ہیں کہ اگر حکومت مسلمانوں کو تحفظات فراہم کرنے سنجیدہ ہے تو فوری بی سی کمیشن تشکیل دے ۔ مفتی ندیم صدیقی نے کہا کہ اردو اخبارات نے جنگ آزادی کے موقع پر نہایت ہی اہم رول ادا کیا تھا ۔      ( باقی سلسلہ صفحہ 5 پر )

TOPPOPULARRECENT