Thursday , November 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / تحفظات کے حصول کیلئے نوجوانوں کو آگے آنے کا مشورہ

تحفظات کے حصول کیلئے نوجوانوں کو آگے آنے کا مشورہ

جنگاؤں میں وال پوسٹرس کی تقسیم، مختلف قائدین کا خطاب
جنگاؤں 18 ستمبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ریاست تلنگانہ میں 12 فیصد تحفظات کے لئے روزنامہ سیاست کی جانب سے شائع کردہ وال پوسٹرس کی تقسیم آج بعد نماز جمعہ موضع پمبرتی جنگاؤں منڈل ضلع ورنگل میں تقسیم کئے گئے۔ پوسٹرس کو دیکھ کر مسلمان خوش ہوئے، یہ بہت اچھا کام ہے ہر کوئی اس کی تائید کرنا ضروری ہے۔ 12 فیصد تحفظات کی قیمت پر افطار پارٹیاں، انعامات، وقوعات اور نمائش نہیں چاہئے۔ بی سی کمیشن کی سفارشات کی بناء ہی تحفظات 12 فیصد چاہئے۔ ایک لاکھ جائیدادوں میں مسلمان 12 فیصد تحفظات سے محروم ہوجائیں گے۔ اعلامیہ سے قبل تحفظات کو قانونی و دستوری طور پر حکومت دے۔ ورنہ مسلمانوں یہ موقع ہاتھ سے چلا جائے گا۔ محمد ابراہیم صدر جامع مسجد پمبرتی نے کہاکہ نوجوان نسل آگے آنا چاہئے۔ اس سے نوجوانوں کو فائدہ ہوگا۔ مسلمان آج تعلیمی اور سیاسی سماجی میدان میں پیچھے ہیں۔ 12 فیصد تحفظات حاصل ہوں گے تو تلنگانہ کے مسلمانوں کے معاشی حالات بہتر ہوں گے۔ ہر مسلمان کی ذمہ داری ہے کہ عید کے موقع پر اس کی تشہیر کریں۔ ودیا بھارتی انجینئرنگ کالج کے طلباء محمد صادق، محمد ارشاد ، محمد احسن نے کہاکہ حکومت اگر تحفظات دے تو طلباء کو فائدہ حاصل ہوگا۔ مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات ملنا اُن کا حق ہے۔ اس لئے کہ مسلمان ہر طرح سے پسماندہ ہیں۔ مسلمان آزادی کے 60 سال گزرنے کے بعد بھی پسماندگی کا شکار ہیں۔ حکومت جلد سے جلد تحفظات دے۔ نائب صدر مسجد کمیٹی محمد ظہیر نے کہاکہ روزنامہ سیاست کی جانب سے یہ مہم شروع کی گئی ہے۔ بہت ہی قابل مبارکباد ہے۔ اس پر کوئی نہ کوئی آگے آنا ضروری ہے۔ آج ہر جگہ اس پر لوگ بات کررہے ہیں۔ روزنامہ سیاست کی وجہ سے تلنگانہ کے ہر مسلمان کو معلوم ہوا ہے۔ محمد جمال شریف ایڈوکیٹ نے کہاکہ ہر مسلمان کی ذمہ داری ہے کہ عیدالاضحی کے موقع پر عیدگاہوں اور مساجد کے پاس 12 فیصد تحفظات کے لئے Flexy اور پوسٹرس لگانا ضروری ہے۔ حکومت کو معلوم ہو کہ تلنگانہ کے مسلمان خاموش رہنے والے نہیں ہیں۔ ہر مسجد کمیٹی، عیدگاہ کمیٹی اور علمائے کرام کی ذمہ داری ہے کہ عید کے موقع پر اس پر آواز اٹھائیں۔ 12 فیصد تحفظات ملنے پر ہر مسلم نوجوان لڑکے لڑکی کو فائدہ ہوگا۔ دستور کے مطابق مسلمانوں کو تحفظات مل سکتے ہیں۔ تمام مسلمان آپسی اتحاد و اتفاق کے ذریعہ حکومت تلنگانہ سے 12 فیصد تحفظات کے حصول کیلئے جوکہ ہمارا حق ہے حکومت پر دباؤ ڈالیں اس لئے کہ چیف منسٹر خود اپنے انتخابی منشور میں تحفظات دینے کا وعدہ کیا تھا۔ مسلمانوں کی تعلیمی اور معاشی پسماندگی کو دور کرنے کے لئے تحفظات ضروری ہے۔ ہندوستان ایک سیکولر ملک ہے۔ نیوز ایڈیٹر روزنامہ سیاست جناب عامر علی خان اس تحریک کو شروع کئے ہیں ہر جگہ آج مساجد کے پاس لوگ اس پر بحث کررہے ہیں۔ لوگوں میں تحفظات کے لئے شعور آگیا ہے۔ اس موقع پر مسجد کمیٹی کے ذمہ داران محمد منور، جہانگیر، خالد، شفیع، یوسف، سلیم، شاہد حسین، طاہر، ابراہیم، عارف، حسین، رفیق اور دوسرے موجود تھے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT