Tuesday , November 21 2017
Home / ہندوستان / تحفظ ماحولیات کیلئے ہندوستان و امریکہ کی مشترکہ مساعی

تحفظ ماحولیات کیلئے ہندوستان و امریکہ کی مشترکہ مساعی

زہریلی گیس پر قابو پانے کے لئے منصوبہ عمل کو قطعیت
نئی دہلی۔/19نومبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) موسم اور ماحولیاتی تبدیلی پر امریکی سفیر برائے ہند رچرڈ ورما نے کہا کہ ’’ سنجنا پریاس۔ سب کا وکاس ‘‘ نعرہ کو عملی شکل دینے کی ضرورت ہے۔ دہلی میں امریکی صدر بارک اوباما اور وزیر اعظم نریندر مودی کے جاری کردہ مشترکہ اعلامیہ میں بین الاقوامی سلامتی، علاقائی اور عالمی امن ، ترقی اور خوشحالی کی ضرورت کو اُجاگر کیا گیا ہے۔ تاہم دور حاضر میں دونوں ممالک کو درپیش سب سے بڑاخطرہ ماحولیات کی تباہی ہے جس کی روک تھام کیلئے بیڑہ اُٹھایا گیا ہے گوکہ صدر اوباما اور وزیر اعظم مودی نے یہ نشاندہی کی ہے کہ ماحولیات کی تبدیلی انسانیت کیلئے خطرناک بن گئی ہے۔ ہند ۔ امریکہ کو عالمی ممالک کے ساتھ تحفظ ماحولیات کیلئے کام کرنا چاہیئے اور اس مقصد کیلئے یو این فریم ورک کنونشن آن کلائمیٹ چینج پر منعقدہ کانفرنس سے رہنمائی حاصل کی جاسکتی ہے۔ فی الحال 150 ممالک 85فیصد فضائی آلودگی کیلئے ذمہ دار ہیں جس پر قابو پانے کیلئے ایک منصوبہ کو قطعیت دے دی گئی ہے تاکہ عالمی حدت میں کمی اور ماحولیات کی حفاطت کو یقینی بنایا جاسکے۔ امریکہ میں گذشتہ 20سال کے دوران صنعتوں اور برقی پلانٹس سے خارج ہونے والی زہریلی گیس کو بڑی حد تک کم کردیا ہے اور اس خصوص میں ہندوستان کی رہنمائی کیلئے آمادہ ہے۔ امریکہ ۔ ہندوستان نے باہمی شراکت داری کے ذریعہ برقی شعبہ میں 3.5 بلین سرمایہ کاری کی ہے جس کے ذریعہ زہریلی گیس سے مبرا توانائی پیدا کی جارہی ہے اور ہندوستان میں شمسی توانائی کی حوصلہ افزائی نے امریکہ اپنی ٹکنالوجی فراہم کرنے کی پیشکش کی ہے ۔ توقع ہے کہ اس شعبہ میں باہمی تعاون سے دونوں ممالک کے درمیان دوستی اور اتحاد مزید مضبوط ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT