Tuesday , November 21 2017
Home / ہندوستان / تحقیقاتی ایجنسیوں سے تعاون کیلئے تیار ہوں

تحقیقاتی ایجنسیوں سے تعاون کیلئے تیار ہوں

تاحال کسی نے بھی ربط پیدا نہیں کیا، ذاکر نائیک کی دو ہفتے بعد واپسی
ممبئی ۔ 11 جولائی۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) مبلغ اسلام ذاکر نائیک جو آج سعودی عرب سے واپس ہونے والے تھے کہا کہ مزید دو تا تین ہفتے بیرونی دورے پر رہیں گے اور وہ منسوبہ الزامات کے سلسلے میں کسی بھی ہندوستانی ایجنسی کے ساتھ تعاون کیلئے تیار ہیں۔ ذاکر نائیک پر اشتعال انگیز تقاریر کے ذریعہ دہشت گردی کو بڑھاوا دینے کا الزام ہے ۔ انھوں نے اسکائپ کے ذریعہ منعقد شدنی پریس کانفرنس بھی منسوخ کردی اور کہا کہ وہ میڈیا کی اس مہم کا نشانہ بنے ہیں۔ آج رات بیرونی ملک سے جاری کردہ ایک بیان میں ذاکر نائیک نے کہاکہ اب تک کسی ہندوستانی سرکاری ایجنسی نے ان الزامات کے خلاف اُن سے ربط قائم نہیں کیا ہے۔ انھوں نے کہاکہ کسی بھی ہندوستانی عہدیدار نے اس مسئلہ پر کوئی وضاحت طلب نہیں کی ۔ وہ اس معاملے میں جب بھی ضرورت ہو کسی بھی ہندوستانی تحقیقاتی ایجنسی سے تعاون کیلئے تیار ہیں۔ تاہم انھوں نے میڈیا پر بیانات کو توڑمروڑکر پیش کرنے اور غلط انداز میں نمایاں کرنے کا الزام عائد کیا تاکہ مفادات حاصلہ کا ایجنڈہ پورا ہوسکے ۔ ذاکرنائیک نے کہاکہ آئندہ چند دنوں میں وہ تمام الزامات کا جواب دیں گے ۔ انھوں نے اس موقف کا اعادہ کیا کہ کبھی دہشت گردی یا تشدد کی تائید نہیں کی ۔ ذاکر نائیک کے ایک قریبی ساتھی نے بتایا کہ اُن کے دورہ کا پروگرام پہلے سے طئے شدہ ہے ، وہ عمرہ کی ادائیگی کے بعد جدہ پہونچنے والے تھے جہاں سے وہ افریقہ جائیں گے ۔ چنانچہ آئندہ دو تا تین ہفتوں بعد ہی اُن کی واپسی متوقع ہے ۔

TOPPOPULARRECENT