Monday , June 18 2018
Home / شہر کی خبریں / ترقی کی کوشش پر کامیابی کا مقدر

ترقی کی کوشش پر کامیابی کا مقدر

نوجوانوں کو ملازمت کی تلاش کے بجائے ملازمت فراہم کرنے کا مشورہ ، کرن مزمدار شاء
حیدرآباد۔7مارچ(سیاست نیوز) نوجوان ملازمت کی تلاش کرنے کے بجائے ملازمت فراہم کرنے کی فکر کے ساتھ آگے بڑھیں تو انہیں ہر قدم پر کامیابی حاصل ہوگی۔ اس فکر کو فروغ دینے کے مثبت نتائج برآمد ہوں گے اور ابتداء میں نوجوانو ںکو اس سلسلہ میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا لیکن ناکامی حد نہیں ہے بلکہ ناکامی کے خوف سے کوشش کرنا بند کردینا سب سے بڑی ناکامی ہے۔ مسز کرن مزمدار شاء صدرنشین و منیجنگ ڈائریکٹر بائیو کان نے انسٹیٹیوٹ آف منیجمنٹ ٹکنالوجی کے کانووکیشن 2018 سے خطاب کے دوران ان خیالات کا اظہار کیا ۔ اس موقع پر رکن پارلیمنٹ و صدر آئی ٹی ایم مسٹر کمل ناتھ کے علاوہ ڈائریکٹر مسٹر ڈاکٹر ستیش الاوادی موجود تھے۔ مسز کرن نے اپنے خطاب کے دوران کہا کہ صنعتی انحطاط دنیا بھر میں ریکارڈ کیا جانے لگا ہے کیونکہ اب دنیا میں جو نظریہ فروغ پا رہاہے وہ صنعتی ترقی اور اپنے ملک میں اپنے صنعتی اداروں کے قیام کا نظریہ ہے جس کی مثال امریکہ کی جانب سے عصری تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے صنعتوں کے احیاء کے منصوبوں کا اعلان کیا جانا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ عصری دور سے ہم آہنگ ہونے والے ادارے اور ٹکنالوجی کو قبول کرنے والے اداروں کی ترقی میں کوئی رکاوٹ نہیں ہے بلکہ یہ ادارے ہی مستقبل کو محسوس کرتے ہوئے آگے بڑھ رہے ہیں۔ مسز کرن شاء نے بتایا کہ جو نوجوان ترقی کیلئے کوشش کرتا ہے کامیابی اس کا مقدر ہوتی ہے اور جو ملازمت کے حصول کی کوشش کرتا ہے وہ ملازمت کی حد تک محدود ہوجاتاہے ۔ انہوں نے سوشل میڈیا کے علاوہ دیگر شعبوں میں پیدا ہونے والی ملازمتوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ چند برس قبل کوئی یہ تصور بھی نہیں کرسکتا تھا کہ سوشل میڈیا کے شعبہ میں اتنی ملازمتیں نکلیں گی اور دنیا کو سوشل میڈیا مارکٹنگ کے ماہرین کی ضرورت اتنی بڑی تعداد میں پڑے گی۔ انہوں نے بتایا کہ مستقبل کلاؤڈ کمپیٹنگ اور مصنوعی ذہانت (روبوٹ) کا ہے اور اس پر محنت کرنے اور نوجوانو ںکو تیاری کرنے کی ضرورت ہے۔صدرنشین بائیو کان نے بتایا کہ جس وقت انہوں نے جینریک اور بائیو ٹیکنالوجی کے متعلق محنت کا آغاز کیا تھا اس وقت کوئی بائیو ٹکنالوجی کی بات نہیں کرتا تھا اور اس وقت انہیں اپنے صنعتی ادارے کو روشناس کروانے میں کافی محنت کرنی پڑی تھی لیکن مسلسل کوشش کے سبب اس کے مثبت نتائج برآمد ہوئے۔ کرن شاء نے بتایا کہ تعلیمی اداروں کے انتظامیہ اور نصاب تیار کرنے والوں بالخصوص بزنس منیجمنٹ کا نصاب تیار کرنے والے اداروں کو چاہئے کہ وہ ہر نصاب میں ڈاٹا سائنس کو شامل رکھیں کیونکہ مستقبل ڈاٹا سائنس کے بغیر کچھ بھی نہیں ہے۔ مسٹر کمل ناتھ رکن پارلیمنٹ و صدر آئی ٹی ایم نے اپنے خطاب کے دوران کہا کہ نوجوان ہر انتہاء کو ابتداء تصور کریں تاکہ وہ ترقی کے ہر زینہ کو پار کرسکیں۔انہوں نے بتایاکہ موجودہ دور میں ٹکنالوجی کے ذریعہ دنیا تیزی سے تبدیل ہونے لگی ہے اور دنیا کی ترقی کی رفتار میں ہونے والے اضافہ سے خود کو ہم آہنگ رکھنے کے لئے نوجوان نسل کو محنت کرنی چاہئے ۔ انہو ںنے مستقبل کو تابناک بنانے کے لئے تجارتی فروغ کو یقینی بنانے کے اقدامات کریں تاکہ انہیں اپنی منزل میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کی تربیت حاصل ہوسکے۔مسٹر کمل ناتھ نے فارغین کو مشورہ دیا کہ وہ خود کو محدود دائرہ میں نہ رکھیں بلکہ حصول علم کے سلسلہ اور تربیت کا حصول جاری رکھیں ۔انہوں نے انسٹیٹیوٹ آف ٹکنالوجی منیجمنٹ کے طلبہ کے مستقبل کیلئے نیک تمناؤں کا اظہار کیا ۔ ڈاکٹر ستیش الاوادی نے ابتداء میںمہمان خصوصی اور صدر ادارہ کا خیر مقدم کرتے ہوئے آئی ٹی ایم کی کارکردگی کے متعلق تفصیلات سے واقف کروایا۔بعد ازاں مسٹر کمل ناتھ اور مسز کرن مزمدار شاء نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ادارہ کی کارکردگی پر طمانیت کا اظہار کیا ۔

TOPPOPULARRECENT