Monday , December 11 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ترقی ہوئی تو مسائل کہاں سے آئے؟

ترقی ہوئی تو مسائل کہاں سے آئے؟

سابق حکومت کے وعدوں پر ایم پی بالکاسمن کا استفسار
سلطان آباد /24 اگست ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) سلطان آباد مستقر پر حلقہ پداپلی رکن پارلیمنٹ بالکاسمن نے ترقیاتی کاموں کا سنگ بنیاد رکھا تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ جونئیر کالج کی کمپاونڈ وال 245 میٹر پندرہ لاکھ روپئے سے تعمیری کام کا افتتاح کیا ۔ انہوں نے اس موقع پر کہا کہ پیلے رنگ کی پارٹی اور تین رنگ والی پارٹی اور دوسری پارٹیاں دعوی کر رہی ہیں کہ ان کے دورِ اقتدار میں ترقی ہوئی ۔ یہ بڑے شرم کی بات ہے ۔ حالانکہ جہاں بھی میں جاتا ہوں وہاں پر سیکڑوں لوگ اپنے اپنے مسائل لے کر آتے ہیں اور درخواست بھی دیتے ہیں ۔ اگر ان کے دور اقتدار میں ترقی ہوئی تو پھر مسائل کہاں سے آئے ۔ 1773-74 دفعہ کے تحت گرام پنچایت میں ترقیاتی اسکیم پر عمل کیا جائے گا ۔ گاندھی جی کے خوابوں کو حقیقت میں تبدیل کرنے کی کوشش چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کر رہے ہیں ۔ 18 سال کی جدوجہد کے بعد چندر شیکھر راؤ کی قیادت میں ترقی ہوگی ۔ کے جی سے پی جی مفت تعلیم دی جائے گی ۔ ریاست میں ڈاکٹرس ، انجینئیرس ، دانشور بنیں گے ۔ پداپلی رکن اسمبلی داسری منوہر ریڈی نے بات کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ حکومت ہر شعبہ میں کامیاب کوشش کر رہی ہے ۔ خاص کر تعلیم اور ماحولیات غریب لوگوں کیلئے اسکیم وغیرہ گراما جیوتی پروگرام پر اعتراض کرنے کا مخالفین کو کوئی حق نہیں ۔ کالج میں پودے لگائے ، کدوروپاک موضع میں 74 لاکھ روپئے کی لاگت سے سی سی روڈ کا تعمیر کام کا آغاز کیا ۔ اس پروگرام میں ایم پی پی یادوپلی ، راجیشوری ، سرپنچ انیاگوڑ ، تحصیلدار راجیتا ، یو ایس ڈی ، ایس پی تلاریڈی ، سی آئی پی سرینواس راؤ ، ایس آئی اندرا سیتا ریڈی ، جانی پاشاہ وغیرہ نے شرکت کی ۔

TOPPOPULARRECENT