Thursday , December 13 2018

ترقی یافتہ دنیا کو اپنے قول پر عمل بھی کرنا چاہیئے

اقوام متحدہ ۔24ستمبر ( سیاست ڈاٹ کام )ہندوستان نے ماحولیات کی تبدیلی سے نمٹنے کیلئے منعقدہ ایک چوٹی کانفرنس سے جو معتمد عمومی بان کی مون نے طلب کی تھی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر ترقی یافتہ دنیا اپنے قول پر عمل بھی کرے تو تبدیلی ماحولیات کے مسئلہ سے نمٹنے کا کارنامہ یقیناً انجام دیا جاسکتا ہے ۔ ہندوستان کے مرکزی وزیر مملکت برائے ماحولیات ‘ جنگلات اور تبدیلی ماحولیات پرکاش جاؤڈیکر نے کہا کہ ماحولیات پر کل منعقدہ چوٹی کانفرنس اس بات کی پابند ہے کہ مسلسل ترقی کے راستے پر گامزن رہے گی ‘ غربت کا انسداد کرے گی اور عام آدمی کے ساتھ ساتھ توانائی میں بھی اضافہ کرے گی ۔ تاہم انہوں نے پُرزور انداز میں کہا کہ یہ بات واضح ہے کہ ترقی یافتہ ممالک اور بھی بہت کچھ کرسکتے ہی اگر وہ فینانس اور ٹکنالوجی کے ذریعہ اس مقصد کے حصول میں مدد کریں اور صلاحیتوں کی تعمیر کو یقینی بنائیں ۔ انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی تعاون کا یہ کلیدی توجہ مرکز ہونا چاہیئے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ترقی یافتہ دنیا اپنے اقوال پر عمل بھی کرے تو ہم یقیناً مقررہ مقاصد حاصل کرسکتے ہیں جو خود ہم نے اجتماعی طور پر مقرر کئے ہیں ۔ چوٹی کانفرنس میں 120 مملکتوں اورحکومتوں کے سربراہوں نے بشمول صدر امریکہ بارک اوباما شرکت کی۔ اقوام متحدہ کے معتمد عمومی نے انتباہ دیا کہ انسانی ماحولیاتی اور معاشی قیمت تبدیلی ماحولیات کی صورت میں اگر وہ تیزی سے ناقابل برداشت ہوجائے تو دنیا کے ہر ملک کو چکانی ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ عالمی قائدین کو اپنے سبزمکانی گیسوں کے اخراج پر تحدیدات عائد کرنی ہوگی‘ ان میں تخفیف کرنی ہوگی تاکہ جاریہ صدی کے اوآخر تک دنیا کاربن کے اعتبار سے اعتدال کی سطح پر آجائے ۔ چوٹی کانفرنس کے دوران ممالک نے اپنے اپنے اقدامات کی تفصیل سے واقف کرایا جن کا مقصد قومی سطح پر مقررہ اپنا حصہ ادا کرنا ہے ۔ جاؤڈیکر نے کہا کہ یہ ایک اچھا آغاز ہے ۔ انہوں نے چوٹی کانفرنس میں ظاہر کردہ عالمی کوششوں کو نوٹ کرنے کے قابل قرار دیا اور کہا کہ ہندوستان اقوام متحدہ کی تبدیلی ماحولیات چوٹی کانفرنس کی ڈسمبر میں پیرو میں مقرر کانفرنس کی کامیابی کا منتظر ہے ۔ جاؤڈیکر نے پُرزور انداز میں کہا کہ اقوام متحدہ کی تبدیلی ماحولیات چوٹی کانفرنس اقوام متحدہ کے چوکھٹے کے اندر منعقد کی جارہی ہے جو تبدیلی ماحولیات پر سودے بازی کا مرکزی ستون ہے ۔دیگر تمام کوششیں صرف تکمیلہ کی حیثیت رکھتی ہیں ۔ جاؤڈیکر نے برقی توانائی کی کارکردگی ‘ جنگلات کی بہتری کے سلسلہ میں مودی حکومت کے اقدامات کی تفصیل بیان کی۔

TOPPOPULARRECENT