Thursday , June 21 2018
Home / عرب دنیا / ترکی: داعش مخالف مظاہرہ‘پولیس سے جھڑپ، 19 ہلاک

ترکی: داعش مخالف مظاہرہ‘پولیس سے جھڑپ، 19 ہلاک

دمشق، انقرہ۔9اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام) ترکی میں داعش کیخلاف احتجاج کرنے والے کرد مظاہرین اور پولیس کے درمیان ہونے والے تصادم کے نتیجے میں 19 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔ کرد مظاہرین بظاہر شامی قصبے کوبانی پر دولتِ اسلامیہ کے حملے کے پیشِ نظر ترکی کی طرف سے اس کے دفاع کے لیے اقدامات نہ کرنے پر خوش نہیں ہیں۔ پولیس نے ملک بھر کے مختلف

دمشق، انقرہ۔9اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام) ترکی میں داعش کیخلاف احتجاج کرنے والے کرد مظاہرین اور پولیس کے درمیان ہونے والے تصادم کے نتیجے میں 19 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔ کرد مظاہرین بظاہر شامی قصبے کوبانی پر دولتِ اسلامیہ کے حملے کے پیشِ نظر ترکی کی طرف سے اس کے دفاع کے لیے اقدامات نہ کرنے پر خوش نہیں ہیں۔ پولیس نے ملک بھر کے مختلف شہروں میں بشمول انقرہ اور استنبول کے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس اور پانی کے توپ کا استعمال کیا ہے۔زیادہ کرد آبادی والے شہروں میں کرفیو نافذ کر دیا گیا ہے۔زیادہ تر کشیدگی ترکی کے جنوب مشرقی علاقوں میں پائی جاتی ہے اور اس سے مردین، سیرت، بیت مین اور موس کے شہر زیادہ متاثر ہوئے۔ترکی کے نائب وزیرِ اعظم یاسین اکودگان نے کہا کہ ترکی وہ سب کچھ کر رہا ہے جو’کوبانی کے لیے کیا جا سکتا ہے۔ترکی میں سب سے بڑی کرد پارٹی کردستان ورکرز پارٹی(پی کے کے) نے دولتِ اسلامیہ کے حملے کے خلاف احتجاج کی اپیل کی تھی۔دریں اثناء جرمنی میں بھی داعش کیخلاف کردوں اور یزدیوں نے احتجاجی ریلی نکالی تاہم ہیمبرگ کی ایک مسجد میں کرد و یزدی مظاہرین کا سامنا مسلمان مظاہرین سے ہوگیا اور باہمی تصادم کے نتیجے میں 23افراد زخمی ہوگئے۔

TOPPOPULARRECENT